News Detail Banner

حکومت نے چیئرمین نیب کے لئے صدارتی آرڈیننس لا کر احتساب کے عمل کومتنازعہ بنا دیا ہے،محمد جاوید قصوری

1سال پہلے

لاہور 11۔اکتوبر 2021

 امیر جماعت اسلامی پنجاب وسطی محمد جاوید قصوری نے کہا ہے کہ باشعور اور ملک و قوم کی خدمت کرنے والے نوجوانوں کے لیے جماعت اسلامی کے دروازے ہمیشہ کھلے ہیں۔ پانامہ لیکس اور پنڈورا پیپرز میں الحمد اللہ ہمارے کسی ایک فرد کا نام بھی شامل نہیں۔ ہم نے ملک و قوم کی بے لوث خدمت کی ہے اور آئندہ بھی کرتے رہیں گے۔ عوام ملک میں حقیقی تبدیلی کے لیے جماعت اسلامی پر اعتماد کا اظہار کریں۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے گزشتہ روز مختلف پروگرامات سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ انہوں نے کہا کہ موجودہ حکومت اپنے تمام دعوؤں اور وعدوں کے اعتبار سے پوری طرح ناکام ثابت ہوئی ہے۔ حکومت نے ملک میں مہنگائی، بد انتظامی، بے روزگاری اور لاقانونیت میں اضافے کے سوا کچھ نہیں کیا۔ تحریک انصاف کی کارکردگی انتہائی مایوس کن ہے۔ وطن عزیز کے تمام ادارے اضطراب کی کیفیت میں ہیں۔ ہر محکمہ کے اندر کرپشن اور لوٹ مار کا دور دورہ ہے۔ عوام کے جائز کام بھی رشوت کے بغیر نہیں ہورہے۔ انہوں نے کہا کہ پی ٹی آئی کی حکومت جو کرپشن کے خاتمے کا نعرہ لگا کر بر سر اقتدار آئی تھی مگر صد افسوس اس کے دور اقتدار میں کرپشن میں بے پناہ اضافہ ہوا ہے۔ محمد جاوید قصوری نے اس حوالے سے کہا کہ چیئرمین نیب کے حوالے سے جس انداز میں حکومت نے صدارتی آرڈیننس سے کام چلایا ہے اس اقدام نے احتساب کے نظام کو متنازعہ بنادیا ہے۔حکومت کی ناقص حکمت عملی اور کمزور تفتیش کے ذریعے جن لوگوں نے بے تحاشا لوٹ مار کی تھی وہ چور اور ڈاکو بھی مظلوم بن کر عدالتوں سے باہر آرہے ہیں۔ جماعت اسلامی اس فرسودہ نظام کے خاتمے کی بات کرتی ہے۔ ہم چاہتے ہیں کہ عوام کو زندہ رہنے کا حق دیا جائے۔ ان کے مسائل فوری حل ہوں۔ ملک سے وی آئی پی کلچر کا خاتمہ ہو۔