News Detail Banner

اسلام کے نام پر دھوکا بازی حکومت کو لے ڈوبے گی،لیاقت بلوچ

14دن پہلے

لاہور13 اکتوبر2021ء

نائب امیر جماعت اسلامی پاکستان سابق پارلیمانی لیڈر لیاقت بلوچ نے لاہور میں علما، سماجی رہنماؤں اور جے آئی یوتھ کے وفود سے ملاقات میں کہا کہ تحریک انصاف کی حکومت نااہلی اور غیر ذمہ دارانہ رویوں سے قومی معیشت کو زوال پذیر کر چکی ہے۔ بے روزگاری اور مہنگائی نے غریب اور متوسط طبقہ کے گھر وں میں ڈیرے ڈال لیے ہیں۔ ڈالرمہنگا اور موت سستی ہو گئی ہے۔ عوام کی قوت خرید  مسلسل کم ہونے کی وجہ سے ختم ہورہی ہے اور قرضوں کا بوجھ قومی معیشت کے لئے تباہی کا باعث بن گیا ہے۔حکومتی نااہلی اور بد انتظامی کی وجہ سے عمران سرکار کے عرصہ اقتدار میں دو کروڑ 7 لاکھ سے زائد لوگ بے روزگار ہو گئے ہیں۔ روپے کی قدر میں تیزرفتار کمی، بے روزگاری میں برق رفتاراضافہ اور زراعت کے مہنگے مدخل، ناقص پالیسی کی وجہ سے زراعت مستحکم نہیں۔ صنعت کار کسانوں کو لوٹ رہے ہیں۔ حکومت کرپٹ مافیا کی سرپرست بن گئی ہے۔

لیاقت بلوچ نے کہا کہ چیئرمین نیب کی تقرری، الیکشن کمیشن آف پاکستان کے ممبران کی تقرری، ڈی جی آئی ایس آئی کی تقرری، پانی کے معاہدہ پر عملدرآمد، این ایف سی ایوارڈ میں صوبوں کو بروقت ادائیگی کے حوالوں سے عمران خان انتہائی ناکام، بے تدبیر اور نااہل لیڈر ثابت ہوئے ہیں۔ پاکستان میڈیا ڈویلپمنٹ اتھارٹی بل کو پوری قوم نے مسترد کر دیا لیکن حکومت اپنی ڈھٹائی پر قائم ہے۔ اسلامی عنوانات پر نئے نئے اعلانات کا شوق پورا کیا جا رہا ہے لیکن آئین کے رہنما اصولوں اور اسلامی نظریاتی کونسل سفارشات کے مطابق ملک کو ریاست مدینہ کا نظام نہیں دیا جا رہا۔ اسلام کے نام پر دھوکا بازی حکومت کو لے ڈوبے گی۔

لیاقت بلوچ نے کا کہ حکومت امریکہ، یورپ کے دباؤ سے باہر نکلے اور خطہ کی بدلتی صورت حال میں آزادانہ انداز اورمستحکم فیصلے کرے، افغانستان کو غیر مستحکم کرنے والی سازشوں کا پاکستان کو حصہ نہیں بننا چاہیے۔ حکومت بلاتاخیر افغان عوام کی فتح اور حکومت کو تسلیم کرے، حکومت انتظار اور ڈر خوف کی وجہ سے کمزور مو قف کے ساتھ وقت ضائع کر رہی ہے۔ افغانستان میں امن ہو گا تو پورا خطہ پُرامن ہو گا۔ افغان بارڈر پر حکومت عوام کی مشکلات کے خاتمہ کے لیے فوری اقدامات کرے۔