News Detail Banner

الیکشن میں لاڈلوں اور سپر لاڈلوں کے درمیان نہیں بلکہ مظلوم اور ظالم کے درمیان مقابلہ ہو گا۔سراج الحق

6مہا پہلے

لاہور 3دسمبر 2023ء 

امیر جماعت اسلامی سراج الحق نے اعلان کیا ہے کہ جے آئی یوتھ 8دسمبر تا 8فروری 63روزہ ملک گیر مہم کا آغاز کر رہی ہے جس کے دوران ووٹ کے ذریعے حقیقی انقلاب کی بنیاد رکھی جائے گی، تحریک کا آغاز تمام ضلعی ہیڈکوارٹر سے ہو گا، ہر پولنگ سٹیشن کی سطح پر 10نوجوانوں پر مشتمل بنیادی جے آئی یوتھ یونٹ قائم کیا جائے گا تاکہ انتخابات میں کسی بھی قسم کی دھاندلی کا راستہ روکا جا سکے، الیکشن تک جماعت اسلامی کے مزید ایک کروڑ ووٹرز بنائے جائیں گے۔ الیکشن میں لاڈلوں اور سپر لاڈلوں کے درمیان نہیں بلکہ مظلوم اور ظالم کے درمیان مقابلہ ہو گا۔

منصورہ میں نائب امیر جماعت اسلامی لیاقت بلوچ، سیکرٹری اطلاعات قیصر شریف، صدر جے آئی یوتھ رسل خان بابر کے ہمراہ پریس کانفرنس کرتے ہوئے انھوں نے کہا کہ جماعت اسلامی کے قومی و صوبائی اسمبلیوں کے 50فیصدٹکٹس نوجوانوں کے پاس ہیں، آیندہ انتخابات میں کسی پارٹی سے نہیں، عوام سے اتحاد ہو گا۔ الیکشن میں تمام سیاسی جماعتوں کو مساوی مواقع فراہم کرنا الیکشن کمیشن کے حلف کا تقاضا ہے، انتخابات سے قبل انھیں متنازع نہ بنایا جائے۔ امیر جماعت اسلامی پنجاب وسطی جاوید قصوری، ڈائریکٹر امور خارجہ جماعت اسلامی آصف لقمان قاضی، سیکرٹری جے آئی یوتھ شاہد نوید ملک، نائب صدر جے آئی یوتھ فرید احمد رزاقی، صدر جے آئی یوتھ پنجاب جنوبی عبدالرحمن، صدر جے آئی یوتھ پنجاب وسطی بشارت صدیقی اور صدر جے آئی یوتھ لاہور جبران بٹ اس موقع پر موجود تھے۔

امیر جماعت نے کہا کہ ملک میں نظام نہیں بدلتا، لاڈلے تبدیل ہوتے رہتے ہیں، گزشتہ 10برس عوام کے لیے مشکل ترین تھے، اس عرصہ میں ن لیگ، پی ٹی آئی اور 14جماعتوں پر مشتمل پی پی اور پی ڈی ایم کے اتحاد کی صورت میں حکومتیں قائم رہیں، دعوے کیے گئے، مگر عوام کی حالت نہیں بدلی، نگران حکومت بھی سابقین کی پالیسیوں پر کاربند ہے، گیس کی قیمتوں میں 11سو فیصد، بجلی کے ٹیرف میں دو سو فیصد، ادویات کی قیمتوں میں پانچ سو فیصد اضافہ ہوا، چینی، آٹا، گھی اور دیگر اشیائے خورونوش کی قیمتیں بھی عوام کی پہنچ سے دور ہیں، پونے تین کروڑ بچے غربت کی وجہ سے سکولوں سے باہر ہیں، حکمران جماعتوں کے نعرے، جھنڈے الگ، پالیسیوں میں یکسانیت ہے۔ ایک ہی قبیل کے ظالم جاگیردار اور کرپٹ سرمایہ دار، مافیا گزشتہ 76برسوں سے ملک پر مسلط ہیں، انھوں نے اداروں کو تباہ کیا، قوم کو آئی ایم کا غلام بنایا، سرکاری خزانہ کو بے دردی سے لوٹا، توشہ خانہ تک کو نہیں چھوڑا، ان حکمرانوں نے غزہ میں اسرائیلی مظالم کے خلاف امریکی خوف کی وجہ سے ایک لفظ نہیں بولا۔ 8فروری ظالم کے احتساب کا دن ہے۔ انھوں نے کہا کہ انتخابات سے قبل سٹیٹس کو پارٹیاں ایک دوسرے سے جوڑ توڑ میں مصروف ہیں، یہ سب مفادات کی گیم ہے جس کا عوام کی خوشحالی، امن اور ترقی سے کوئی سروکار نہیں۔ 

سراج الحق نے کہا کہ آیندہ 63دنوں میں جماعت اسلامی کا ہر کارکن 100نئے ووٹر بنائے گا۔ جماعت اسلامی کے کرپشن فری اسلامی خوشحال پاکستان کا پیغام ہر گھر تک دستک مہم کی صورت میں پہنچایا جائے گا۔ انھوں نے کہا کہ ملک کے نوجوانوں میں یکسوئی ہے کہ صرف جماعت اسلامی ہی حقیقی تبدیلی لا سکتی ہے۔ گزشتہ ادوار میں روٹی، کپڑا، مکان، ملک کو ایشین ٹائیگر بنانے، سب سے پہلے پاکستان اور حقیقی تبدیلی کے نعروں کے تحت عوام اور نوجوانوں سے دھوکا کیا گیا، حکمران پارٹیاں اب بری طرح ایکسپوز ہو گئیں۔ 

اس موقع پر گفتگو کرتے ہوئے رسل خان بابر نے کہا کہ پانچ کروڑ 79لاکھ نوجوان آیندہ الیکشن میں فیصلہ کن کردار ادا کریں گے، ملک میں 10ہزار 787یونین کونسلز کی سطح تک جے آئی یوتھ کے ایک لاکھ ذمہ داران ہیں اور اس لحاظ سے جماعت اسلامی نوجوانوں کی ملک میں سب سے بڑی نمائندہ سیاسی جماعت ہے۔ انھوں نے کہا کہ آیندہ انتخابات میں جماعت اسلامی سب کو حیران کر دے گی۔