News Detail Banner

جماعت اسلامی قدرمشترک اور دردمشترک کی بنیادوں پر امت کے اتحاد کی جدوجہد کر رہی ہے۔سراج الحق

8مہا پہلے

لاہور7نومبر 2023ء

امیر جماعت اسلامی سراج الحق نے کہا ہے کہ جماعت اسلامی قدرمشترک اور دردمشترک کی بنیادوں پر امت کے اتحاد کی جدوجہد کر رہی ہے، سید مودودیؒ اور امام خمینیؒ کا پیغام آفاقی اور عالم اسلام کو ایک لڑی میں پرونے کا ہے، تمام اسلامی ممالک متحد ہو کر اسرائیل سفاکیت روکیں، ایک ماہ گزر گیا، غزہ جل رہا ہے۔ عالمی برادری، او آئی سی اسرائیل کو لگام ڈالنے میں ناکام ہو گئے۔ ان خیالات کا اظہار انھوں نے تہران میں رہبر ایران کے مشیر برائے امور خارجہ آیت اللہ آغا قمی اور دیگر رہنماؤں سے ملاقات کے دوران کیا۔ 

امیر جماعت ایران، ترکی اور قطر کے دوروں کے پہلے مرحلے میں تہران میں ہیں۔ دورہ کے دوران وہ تینوں ممالک کے اہم سیاسی ومذہبی رہنماؤں اور اسلامی تحریکوں کے قائدین سے ملاقاتیں اور فلسطین میں وقوع پذیر انسانی المیہ کو روکنے کے لیے مشاورت اور تبادلہ کریں خیال کریں گے۔ اس دوران وہ 9اور 10نومبر کو اسلامی تحریکوں کی قیادت کی اجلاس میں شرکت کریں گے۔ امیر جماعت حماس کے رہنماؤں اسماعیل ہنیہ اور خالد مشعل سے بھی اہم ملاقات کریں گے۔ ان کے دورے کا مقصد غزہ میں وقوع پذیر انسانی المیہ کو روکنے کے لیے تینوں ممالک کے حکام کو اہل فلسطین کو اسرائیلی مظالم سے بچانے کے لیے عملی اقدامات پر آمادہ کرنا ہے۔ ڈائریکٹر شعبہ امورخارجہ جماعت اسلامی آصف لقمان قاضی اور نائب امیر کے پی صابر اعوان بھی ان کے ہمراہ ہیں۔

سراج الحق نے کہا کہ ہم مسئلہ فلسطین کو اجاگر کرنے کے لیے شب و روز محنت کررہے ہیں۔ جماعت اسلامی نے کراچی اور اسلام آباد میں غزہ ملین مارچ منعقد کیے ہیں۔ لاہور میں 19نومبر کو ملین مارچ ہو گا۔ قومی فلسطین کانفرنس میں تمام سیاسی جماعتوں کو مسئلہ فلسطین کے لیے ایک پلیٹ فارم پر جمع کیا ہے۔ القدس کمیٹی نے مسلمان سفیروں سے ملاقاتوں میں مسئلہ فلسطین کو اجاگر کیا ہے۔ ہم ایران، قطر اور ترکی کے دورے میں مشترکہ لائحہ عمل تشکیل دینے پر زور دے رہے ہیں۔ انھوں نے کہا کہ اگرچہ پاکستان میں انتخابات کی تاریخ کا اعلان ہو چکا ہے، لیکن جماعت اسلامی اہل فلسطین کے لیے موثر آواز بلند کرتی رہے گی۔

آیت اللہ آغا قمی نے کہا کہ ایران جماعت اسلامی کو بہت اہمیت دیتا ہے، بانیئ جماعت سید ابوالاعلیٰ مودودیؒ اور امام خمینیؒکے درمیان درینہ تعلقات تھے، دونوں شخصیات نے اسلامی نظام حکومت کے قیام کے لیے جدوجہد کی۔ انھوں نے کہا کہ فلسطین کی آزادی کے لیے تمام اسلامی ممالک کو متحد ہو کر لائحہ عمل تشکیل دینا ہو گا۔ انھوں نے سابق امیر جماعت قاضی حسین احمدؒ سے بھی درینہ تعلقات کا ذکر کیا اور کہا کہ ایران اور پاکستان کے عوام ایک دوسرے کے لیے محبت و اخوت کے جذبات رکھتے ہیں، دونوں اسلامی ممالک کے تاریخی تعلقات ہیں۔