News Detail Banner

پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافہ کے خلاف جمعہ 18اگست کو ملک گیر احتجاج ہو گا۔سراج الحق

6مہا پہلے

لاہور16 اگست 2023ء

امیر جماعت اسلامی سراج الحق نے پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافہ کے خلاف جمعہ 18اگست کو ملک گیر احتجاج کا اعلان کرتے ہوئے کہا ہے کہ نگران حکومت نے آتے ہی سابقہ حکومتوں کے ظالمانہ اقدامات کی توثیق کر دی۔ پٹرول اور ڈیزل کی فی لیٹر قیمتوں میں یکمشت 20روپے اضافہ ظلم کی انتہا ہے، جماعت اسلامی اسے مسترد اور فوری واپس لینے کا مطالبہ کرتی ہے۔ غریبوں میں مہنگائی کا مزید بوجھ برداشت کرنے کی سکت نہیں۔ قوم اپنے حق کے لیے آواز بلند کرے اور جماعت اسلامی کے پرامن احتجاج کا حصہ بنے۔

منصورہ سے جاری بیان میں انھوں نے فیصل آباد کی تحصیل جڑانوالہ میں ہونے والے پرتشدد واقعات کی پرزور مذمت کی اور شفاف تحقیقات کا مطالبہ کرتے ہوئے کہا کہ کسی کو بھی کسی مذہب کے مقدسات جلانے اور ان کی بے حرمتی کی اجازت نہیں دی جا سکتی، سازش کے تحت ملک کے امن کو برباد کیا جا رہا ہے، وفاقی و صوبائی نگران حکومتیں اور سیکیورٹی ادارے اپنی ذمہ داری پوری کریں۔

سراج الحق نے کہا کہ نگران حکومت سے توقع تھی کہ گزشتہ پانچ برس کے ظالمانہ اقدامات کے ازالہ کے طور پر مہنگائی میں کمی کر کے پسے ہوئے عوام کو ریلیف دے گی مگر یوم آزادی کے ایک روز بعد ہی عوام پر پٹرول بم گرا دیا گیا۔ انھوں نے کہا کہ آئی ایم ایف کے کہنے پر غریبوں کو نشانہ بنایا جا رہا ہے۔ ملک کی آدھی سے زیادہ آبادی خط غربت سے نیچے زندگی گزار رہی ہے، لوگ اپنی بنیادی ضروریات پوری نہیں کر سکتے، ماضی کی حکومتوں نے عوام سے سب کچھ چھین لیا۔ 98فیصد عوام کے وسائل پر دو فیصد اشرافیہ قابض ہے، ماضی کے حکمرانوں نے قرضے لے کر خود ہڑپ کر لیے اور ادائیگی کے لیے قوم کا خون نچوڑا، غریبوں پر بے جا ٹیکسز عائد کیے گئے اور پٹرول، بجلی، گیس اور اشیائے ضروریہ کی قیمتوں میں بے پناہ اضافہ کر کے عوام کا جینا حرام کر دیا گیا۔ ہونا تو یہ چاہیے تھا کہ حکمران اپنی مراعات کم کرتے، مفت پٹرول، بجلی اور گیس کے استعمال پر پابندی لگتی اور ملک کے وسائل عوام پر خرچ ہوتے، مگر 75سالہ تجربات سے یہ ثابت ہو چکا ہے کہ ایوانوں میں براجمان ظالم جاگیردار اور کرپٹ سرمایہ دار جو نسل در نسل حکمرانی کے مزے لیتے آ رہے ہیں کو قوم کی فلاح و بہبود سے کوئی غرض نہیں، انھیں صرف اپنے مفادات عزیز ہیں۔ نام نہاد بڑی سیاسی جماعتوں کو ایک بار نہیں بار بار اقتدار ملا اور انھوں نے ہر دفعہ عوام سے دھوکا کیا، حکمرانوں نے دولت کے انبار اکٹھے کیے، بیرون ممالک جائدادیں بنائیں، ان کے کاروبار اور فیملیز باہر اور یہ یہاں اپنی اور نسلوں کی حکمرانی چاہتے ہیں۔

امیر جماعت نے کہا کہ بہتری کا واحد راستہ اسلامی نظام ہے، نام نہاد جمہوری حکومتوں اور مار شل لاز مسائل کا حل نہیں، قوم کو ووٹ کی طاقت کا درست استعمال کرنا ہو گا، اسی سے ہی ملک کو اہل اور ایماندار قیادت میسر آئے گی، آزمائی ہوئی حکمران جماعتوں کو مزید مواقع فراہم کرنا آئندہ نسلوں کو استعمار کی غلامی میں دینے کے مترادف ہے۔ عوام کے پاس جماعت اسلامی کی صورت میں بہترین آپشن ہے۔ جماعت اسلامی اقتدار میں آ کر سودی معیشت کا خاتمہ کرے گی، عدالتوں میں قرآن کا نظام لائیں گے، وسائل کو قوم کی بہتری اور ملک کی ترقی کے لیے استعمال کیا جائے گا، ظالموں، لٹیروں کا کڑا احتساب ہو گا۔