Jamaat-e-Islami Pakistan |

وزیر اعلیٰ ہاوس کے باہر 17ستمبر کو ہونے والے دھرنے میں مرد وخواتین بڑی تعداد میں شرکت کریں گے،محمد جاوید قصوری


14 ستمبر 2020ء؁
لاہور( )امیر جماعت اسلامی پنجاب وسطی محمد جاوید قصوری نے کہا ہے کہ موٹروے سانحہ پر جس انداز میں حکمرانوں کی نااہلی کھل کر سامنے آئی اور ابھی تک پولیس تمام ملزمان کو گرفتار کرنے میں ناکام ہے۔اس سے عوام میں عدم تحفظ پھیل رہا ہے۔ 17ستمبر کو وزیر اعلیٰ ہاوس کے باہر ہونے والے دھرنے میں مرد وخواتین کی بڑی تعداد شرکت کرئے گی۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے گزشتہ روز مختلف عوامی وفود سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ انہوں نے کہا کہ لاہور سمیت پورے صوبے میں جرائم کی شرح میں ریکارڈ اضافہ ہو چکا ہے۔ پاکستان کو ریاست مدنیہ جیسی ریاست بنانے کا دعویٰ کرنے والے قوم کو بتائیں کہ کیا یہی فلاحی ریاست ہے جس کا خواب عوام کو دکھایا گیا تھا۔بد قسمتی سے موجودہ حکمران ہرمحاذ پر بری طرح ناکام ثابت ہوئے ہیں۔ ایک طرف عوام کی جان و مال اور عزت و آبرو کچھ بھی محفوظ نہیں رہا۔ درندے دندناتے پھر رہے ہیں اور قانون نافذ کرنے والے ادارے بے بس دکھائی دیتے ہیں تو دوسری طرف وزراء کا رویہ انتہائی شرمناک اور توہین آمیزہے۔اس اہم مسئلے پر بھی سیاست کی جارہی ہے۔انہو ں نے کہا کہ سانحہ ساہیوال کے مجرمان کو اگر قرار واقعی سزا مل جاتی تو آج حالات مختلف ہوتے۔ ملک میں قانون نام کی کو ئی چیز نہیں۔جنگل کا قانون رائج ہے۔ حکمرانوں نے عوام کو مایوس کے اندھیروں میں دھکیل دیا ہے۔ محمد جاوید قصوری نے اس حوالے سے مزید کہا کہ انتخابات سے قبل عمران خان نے پولیس اصلاحات کرنے کا وعدہ قوم کے ساتھ کیا تھا، مگر افسوسناک امر یہ ہے کہ دیگر وعدوں کی طرح یہ وعدہ بھی یوٹرن کی نذ ر ہو چکا ہے۔اگر حقیقی معنوں میں ملک کو جرائم سے پاک کرنا ہے تو پولیس اصلاحات کا عمل شروع کرنا ہو گا۔ تھانے جرائم پیشہ افراد کی آماجگاہ بن چکے ہیں۔ 

Youtube Downloader id

 
 
 
 
     ^واپس اوپر جائیں




سوشل میڈیا لنکس