Jamaat-e-Islami Pakistan | English |

اہم خبریں

وزیراعظم خود کہا کرتے تھے کہ اگر مہنگائی ہو تو سمجھو حکمران چور ہے ،سینیٹر سراج الحق



لاہور23فروری2020ء
امیر جماعت اسلامی پاکستا ن سینیٹر سراج الحق نے کہاہے کہ پی ٹی آئی حکومت کا جنازہ نکل چکاہے ۔ وزیراعظم کے دو افراد پر مشتمل گھرانے کا دو لاکھ میں گزارا نہیں ہو رہا اور خود وزیراعظم پریشان ہیں ۔ تبدیلی کے نام پر مہنگائی اور نیا پاکستان قبول نہیں، ہمیں پرانا پاکستان واپس کیا جائے ۔ وزیراعظم خود کہا کرتے تھے کہ اگر مہنگائی ہو تو سمجھو حکمران چور ہے اب عوام حکمرانوں کو چور سمجھنے میں حق بجانب ہیں ۔ حکومت نے لوگوں سے روٹی کا نوالہ بھی چھین لیا ہے ۔ عوام کا خون نچوڑ کر آئی ایم ایف کو پلانے والوں نے ہماری آزادی اور خود مختاری کو گروی رکھ دیاہے ۔ ملک پر عملاً آئی ایم ایف کی حکومت ہے ۔ گیس اور بجلی کی کمپنیاں کما رہی ہیںاور غریب عوام پر مسلسل مہنگائی کے کوڑے برسائے جارہے ہیں ۔ وزیراعظم اپنی ناکامیاں چھپانے کے لیے اداروں کو بدنام کر رہے ہیں لیکن اب وہ یہ نہیں کہہ سکتے کہ عوام انکے ساتھ ہیں ۔ قوم مطالبہ کرتی ہے کہ آئی ایم ایف کے معاہدوں کو منسوخ کیا جائے ۔ ایسا احتساب جس میں تمہارا چور مردہ باد اور ہمارا چور زندہ باد ، کوئی قبول نہیں کرے گا ۔ چیئرمین نیب کہتے ہیں کہ اگر حکومت میں بیٹھے چوروں کو پکڑا تو حکومت پندرہ دن نہیں چلے گی ۔آٹے چینی کا بحران پیدا کرنے والے وزیراعظم کے دائیں بائیں بیٹھے ہیں ۔جماعت اسلامی نے مہنگائی بے روزگاری کے خلاف تحریک کا آغاز کردیا ہے ۔ ملک گیر سطح پر مہنگائی کے خلاف احتجاجی مظاہرے ، ریلیاں اور جلسے ہوں گے ۔26 فروری کو مہنگائی و بے روزگاری کے خلاف تیمر گرہ میں عوامی مارچ ہوگا۔ ان خیالات کا اظہا ر انہوںنے جماعت اسلامی کی طرف سے مہنگائی اور بے روزگاری کے خلاف شروع کی گئی تحریک کے سلسلہ میں مینگورہ میں عوامی مارچ کے شرکا سے خطاب کرتے ہوئے کیا ۔
سینیٹر سراج الحق نے کہاکہ حکمران خود بھی مایوس ہیں اور عوام کو بھی ناامیدی کے اندھیروں میں دھکیل رہے ہیں ۔ قومیں کارخانوں سے ترقی کرتی ہیں لنگر خانوں سے نہیں ۔ زرعی ملک کا کسان اور کاشتکار بھوکا مر رہاہے ۔ انہو ں نے کہاکہ مشرف آمریت اور نام نہاد جمہوری حکومتوں میں رہنے والوں کا ملغوبہ بنا کر ملک پر مسلط کردیا گیا ہے جو لوگ پہلے ناکامیوں کی داستان لکھ چکے ہیں اب کونسا تیر چلائیں گے ۔ وزراءکا بینہ اجلاسوں میں ایک دوسرے پر الزام لگاتے اور آپس میں لڑتے ہیں ۔ ان کے درمیان کوآرڈی نیشن کی یہ صورتحال ہے کہ اگر ایک دوسرے پر اعتماد کرنے کو تیار نہیں اور وزیراعظم خود کہتے ہیں کہ میری بات کوئی نہیں سنتا ۔انہوںنے کہاکہ عوام نے بار بار مختلف پارٹیوں کو آزما کر دیکھ لیا ، سب نے عوام کی پریشانیوں اور دکھوں میں اضافہ کیاہے ۔ تبدیلی کے نام پر آنے والوں نے بھی سوائے مہنگائی اور بے روزگاری کے کچھ نہیں دیا۔ اب یہ لوگ عوام کا سامنا نہیں کرسکتے ۔ انہوں نے کہاکہ جماعت اسلامی کی دیانتدار قیادت ہی ملک کو کرپشن فری بنا سکتی ہے ۔ جماعت اسلامی آئے گی تو ترقی اور خوشحالی لائے گی ۔ ہم عوام کو تعلیم ، صحت ، روزگار اور سستا انصاف دیں گے ۔ ہمارے پاس حقیقی تبدیلی کا اصل ایجنڈا ہے۔ اللہ تعالیٰ کا عطا کردہ قرآن و سنت کا نظام ہی تمام مسائل کا حل ہے ۔
سراج الحق نے کہاکہ دنیا مریخ اور چاند پر پہنچ گئی ہے لیکن ہمارے حکمران مرغی اور کٹے کی گردن پر سوار ہوکر ترقی کا سفر کرنا چاہتے ہیں ۔ حکمرانوں کی بڑی نااہلی اور کیاہوگی کہ گندم سستی بیچ کر کسانوں کو تباہ کیااور دوبارہ مہنگی گندم خرید کر عوام کو تباہ کیا۔ انہوںنے کہاکہ حکومت میں بد دیانت ، خود غرض اور کرپٹ لوگ بیٹھے ہوں تو ملک ترقی نہیں کرتے ۔ وزیراعظم چوروں کو پکڑنے اور ان کا محاسبہ کرنے کی بات کرتے ہیں مگر اپنے پیاروں، جنہوں نے آٹے چینی کا بحران پیدا کر کے غربت کے مارے عوام سے اربوں روپے لوٹ لیے ہیں ، کو پکڑنے کو تیار نہیں ۔ وزیراعظم خود بتائیں کہ احتساب کا کوئی نظام ان حالات میں کیسے کامیاب ہوسکتاہے ۔انہوںنے کہاکہ نااہل حکمرانوں نے غریب کی مشکلات میں بے پناہ اضافہ کردیا ہے ۔آٹے اور چینی کے بحران جنوں نے نہیں انسانوں نے پیدا کئے ،یہ انسانیت کے دشمن ہیں جو اپنی چند روز ہ زندگی کی عیش و عشرت کیلئے غریب عوام سے زندہ رہنے کا حق چھین رہے ہیںاور خود دولت کے انبار لگارہے ہیں۔انہوںنے کہاکہ جماعت اسلامی نے کراچی سے لے کر چترال تک مہنگائی کے خلاف تحریک کاآغاز کردیاہے اور اس کو منطقی انجام تک پہنچاکر دم لیں گے ۔ عوام جماعت اسلامی کا ساتھ دیں ۔
 

Youtube Downloader id

 
 
 
 
     ^واپس اوپر جائیں



سوشل میڈیا لنکس