Jamaat-e-Islami Pakistan | English |

علماء نے ہمیشہ نظریاتی سرحدوں کی حفاظت اور اصلاح معاشرہ کےلئے اپنا بھرپور کردار ادا کیا ہے،محمد حسین محنتی


مٹیاری(اسٹاف رپورٹر)20 فروری 2020 جماعت اسلامی سندھ کے امیر و سابق ایم این اے محمد حسین محنتی نے کہا ہے کہ تعلیم و تربیت نسلوں کی پرورش کا کام ہے۔ علماءو دینی مدارس نے ہمیشہ نظریاتی سرحدوں کی حفاظت اور اصلاح معاشرہ کےلئے اپنا بھرپور کردار ادا کیا ہے۔ غریب اور بے سہارا لوگوں کی مدد کر کے اسے معاشرے کا کارآمد شہری بنانا ملک و قوم کی خدمت اور رب کی رضا کا بہترین ذریعہ ہے۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے معروف دینی درسگاہ جامعہ منصورہ سندھ میں اساتذہ کرام کی نشست سے خطاب اور الخدمت سندھ کے تحت ہالا میں قائم آغوش سینٹر (یتیم خانہ) کے تعمیراتی کام کے دورے کے دوران کیا۔بارہ کروڑ سے زائد رقم کی لاگت سے تعمیرہونے والے اس آغوش سینٹر میںسندھ بھر سے دوسو یتیم بچوں کی بھترین تعلیم وتربیت اور قیام وطعام کا اہتمام کیا جارہا ہے۔ہاسٹل کے ساتھ ہی مسجد سعید کا کام بھی تیزی کے ساتھ جاری ہے۔ صدر مدرس جامعہ منصورہ شیخ الحدیث آغا محمد مینگل، مدیر جامعہ مولانا محمد احسن بھٹو، پروفیسر ڈاکٹر محمد اسحاق منصوری اور سابق رکن مرکزی مجلس شوریٰ حافظ لطف اللہ بھٹو،امیرضلع مٹیاری مولانا فقیرمحمد لاکھو اورصوبائی سیکرٹری اطلاعات مجاہدچنابھی موجود تھے۔ محمد حسین محنتی نے کہا کہ جماعت اسلامی کا انتخابات میں حصہ لینا اور حکومت کا حصول صرف ایک ٹول تو ہو سکتا ہے مگر اصل مقصد و منزل تعلیمی انقلاب، شریعت کا نفاذ ہے۔ جس کےلئے جماعت اسلامی اپنے قیام کے اول روز سے کوشاں ہے۔ صوبائی امیر نے کہا کہ جامعہ منصورہ سندھ 70 سال اپنی خدمات سرانجام دے رہا ہے۔ملک بھر سے بچے یہاں تعلیم حاصل کر رہے ہیں،یہاں سے فارغ ہونے والے بچے ملک کے اندر اورباہرزندگی کے مختلف شعبہ جات میں فرائض سرانجام دے رہے ہیں مگر ابھی کام باقی ہے انہوں نے اساتذہ پر زور دیا کہ وہ طلباءکے اندر دینی و تعلیمی شعور پختا، مقصد زندگی سے آگاہی کے ساتھ انہیں اقامت دین کی جدوجہد کےلئے تیار کیا جائے تاکہ بانی پاکستان قائد اعظمؒ کا اسلامی جمہوریہ و فلاحی ریاست کا خواب شرمندہ تعبیر ہوسکے 

Youtube Downloader id

 
 
 
 
     ^واپس اوپر جائیں



سوشل میڈیا لنکس