Jamaat-e-Islami Pakistan | English |

منعم ظفر خان کی وفد کے ہمراہ سپرنٹنڈنٹ انجینئر واٹر بورڈ ڈسٹرکٹ سینٹرل محمد علی شیخ سے ملاقات/پانی کی قلت سے آگاہ کیا


کراچی 25 جنوری 2020ء: جماعت اسلامی ضلع وسطی کے امیر منعم ظفر خان نے کہا ہے کہ حب ڈیم میں پانی کی وافر مقدار ہونے کے باوجود اور سردی کے موسم میں بھی شہری ٹینکرز کے ذریعے پانی خریدنے پر مجبور ہیں،بیشتر مقامات خاص طور پر سیکٹر 7D کے مکین طویل عرصے سے پانی کی عدم فراہمی کا شکار ہیں اور اگر کبھی پانی آبھی جائے تو وہ گندہ اور بدبودار ہوتا ہے، عبداللہ کالج سے لے کر ناگن چورنگی تک کے علاقہ مکین پینے کے پانی کے لئے ٹینکرز مافیا کے رحم و کرم پر زندگی گزار رہے ہیں، انہوں نے یہ بات واٹر اینڈ سیوریج بورڈ ڈسٹرکٹ سینٹرل کے سپرنٹنڈنٹ انجینئرمحمد علی شیخ سے ان کے دفتر میں وفد کے ہمراہ ملاقات کے موقع پر کہی، وفد میں جماعت اسلامی ضلع وسطی کی پبلک ایڈ کمیٹی کے اراکین، نجم ادریس، اقبال حمید، شبیر خیر، سیف الحق عثمانی، شہزاد مظہر اوردیگر شامل تھے۔ ملاقات میں نیو کراچی کے ایکسئین ریحان احمد اور نارتھ ناظم آباد کے ایکسئین سہیل خان اور واٹر بورڈ کے ضلعی افسران بھی موجود تھے۔منعم ظفر نے کہا کہ یوسی 15 سیکٹر 7D1،  سیکٹر 7D2، سیکٹر 7D3، بلاک N، بلاک H اور کٹی پہاڑی  سے ملحق پوری آبادی پانی کے لئے پریشان ہے۔ ناظم آباد پاپوش میں سیوریج سسٹم کا بھی بُرا حال ہے۔یہاں کے شہریوں کو فوری ریلیف کی ضرورت ہے۔سپرنٹنڈنٹ انجینئر محمد علی شیخ نے اپنے مکمل تعاون کا یقین دلاتے ہوئے امیر ضلع وسطی منعم ظفر خان کو بتایا کہ واٹر بورڈ نے ہمارے ضلع کے لئے 80 ملین کا ترقیاتی بجٹ منظور کرلیا ہے اور تقریباً 60 ملین کا بجٹ روک لیا ہے، منظور شدہ بجٹ سے ہم اجمیر نگری پر دو بڑی موٹرز لگوائیں گے اور کٹی پہاڑی سے ملحقہ آبادی کے لئے 18انچ کی نئی لائن بھی ڈالیں گے، اسی طرح متاثرہ علاقوں میں سیوریج کی لائین ڈالی جائی گی، اس میں پاپوش کا علاقہ بھی شامل ہے۔ علاقائی مسائل کے حل کے لئے انہوں نے واٹر و سیوریج کے ذمہ داران کو پابند کیا کہ وہ جماعت اسلامی پبلک ایڈ کمیٹی کے مقامی ذمہ داران کے ساتھ الگ نشست رکھ کر ان کے مسائل حل کروائیں۔

Youtube Downloader id

 
 
 
 
     ^واپس اوپر جائیں



سوشل میڈیا لنکس