Jamaat-e-Islami Pakistan | English |

پاکستان ، ایران ، سعودی عرب ، ترکی اور افغانستان کے تعلقات مضبوط ہو جائیں تو تمام ممالک ترقی کریں گے ۔لیاقت بلوچ


لاہور 16جنوری 2020ء:نائب امیر جماعت اسلامی پاکستان اور ملی یکجہتی کونسل کے سیکرٹری جنرل لیاقت بلوچ جو اپنی سربراہی میں آج کل ملی یکجہتی کونسل کے آٹھ رکنی وفد کے ہمرا ہ ایران کے دورہ پر ہیں نے مشہد(ایران) میں گفتگو کرتے ہوئے کہاہے کہ پاکستان ، ایران ، سعودی عرب ، ترکی اور افغانستان کے حکومتی اور عوامی سطح پر تعلقات مضبوط ہو جائیں تو تمام ممالک علم ، تحقیق ، سائنس و ٹیکنالوجی ، اقتصادی محاذ پر ترقی کریں گے ۔عالمی استعمار اسلام اور مسلمانوں کی ترقی کا دشمن ہے ۔ پانچوں ممالک میں مداخلت بند ہو جائے او رمشترکہ دشمن کے مقابلہ میں مشترکہ حکمت عملی بنالی جائے تو جنگ اور دہشتگردی سے نجات مل جائے گی ۔ کوالالمپور کانفرنس بہترین موقع تھا ، پاکستان کے عوام نے وزیراعظم عمران خان کی عدم شرکت پر ناراضگی کا اظہار کیاہے ۔ اب بھی ایسی کانفرنس کا اہتمام ہو جس میں سعودی عرب ، ایران کے سربراہ بھی ہوں اس مقصد کے لیے پاکستان ، ترکی ، ملائیشیا کے سربراہان مملکت مشترکہ کوشش کریں ۔ امریکہ یا یورپی یونین سے توقعات رکھنا حماقت ہے ۔ اس میں سر ا سر اسلامی ممالک کا خسارہ ہے ۔ کشمیر اور فلسطین کے مظلوم عوام اور ان کی لازوال قربانیوں کا حق ہے کہ انہیں آزادی اور حق خود ارادیت ملے ۔ 

ملی یکجہتی کونسل کے وفد نے دورہ ایران کے دوران مشہد خراسان سائنس ، ٹیکنالوجی ،دلی فقیر کے نمائندہ برائے اہل سنت ، سنی علما اور امام جمعہ سے ملاقات کی ۔ فارس کے قومی شاعر فردوسی اور امام غزالی کے مزار ، مدرسہ ، خانقاہ کا دورہ کیا ۔ امام رضا ؒ کے مزار اقدس پر وفد نے حاضری دی اور محفل قرآن میں جنر ل قاسم سلیمانی شہید کی تعزیت کی ۔روضہ امام رضا ؒ کے متولی نے وفد کا خیر مقدم کیا اور تعزیت پر آمد کا شکریہ ادا کیا ۔ وفد لیاقت بلوچ کی سربراہی میں عار ف حسین واحدی ، سید صفدر گیلانی ، علامہ مقصود احمد سلفی ، سید ناصر شیرازی ، طاہر حبیب نقشبندی ، علامہ ثاقب اکبر ، رضیت باللہ پر مشتمل ہے ۔

Youtube Downloader id

 
 
 
 
     ^واپس اوپر جائیں



سوشل میڈیا لنکس