Jamaat-e-Islami Pakistan | English |

اہم خبریں

شوگر ملز ایسوسی ایشن کی جانب سے پنجاب بھر میں شوگر ملوں کو بند کرنے کے اعلان سے کسانوں کے لیے بڑے مسئلے نے سر اٹھا لیا


لاہور31دسمبر2019ء:پنجاب بھرمیں شوگرملز مالکان کی جانب سے اچانک شوگرملوں کی بندش کے فیصلہ پر کسانوں کے لیے ایک اور بڑی مشکل نے جنم لے لیاہے پنجاب بھرمیں کماد کی تیار فصل کا خشک ہوجانے کا اندیشہ ہے جس کی وجہ سے کسانوں کو ناصرف شدید مشکلات کا سامنا کرنا پڑے گا بلکہ ملک میں چینی کے بحران کا بھی اندیشہ ہے اس حوالے سے کسانوں کی نمایندہ تنظیم کسان بورڈ پاکستان نے شوگرملز ایسوسی ایشن کے اس فیصلے کو مسترد کرتے ہویے اسے کسان دشمنی قرار دیتے ہویے ملک بھر میں احتجاج کی کال دے دی ہے صدر کسان بورڈ پاکستان چوہدری نثار احمد اور سیکرٹری جنرل چوہدری شوکت علی چدھڑ نے مختلف اضلاع کے گنے کے کاشتکاروں کے وفود سے گفتگو کرتے ہویے کیا ۔انہوں نے کہا کہ حکومت شوگرملز مافیا کے ہاتھوں مجبور ہو چکی ہے کیونکہ تحریک انصاف کے بڑے ذمہ دار اس مافیا کا خود حصہ ہیں انہوں نے کہا کہ اس فیصلے کی وجہ سے کماد کی تیار فصل خشک ہو جایے گی شوگر ملز مالکان حکومت کی جانب سے دیے جانے والے گنے کے ریٹ کو تسلیم نہیں کرتے اس لیے وہ گنا خریدنے کو تیار نہیں فیصل آباد میں دو شوگر ملیں بند کر دی گیں ہیں اوکاڑہ میں عبداللہ شوگر ملز بند ہو چکی جبکہ بابا فرید شوگر ملز نے بھی گنا خریدنے سے انکار کر دیا ہے انہوں نے خبردار کیا کہ اگر شوگر ملزمافیا کا یہی کردار رہا اور شوگر ملیں فوری طور پر نہ چلائی گئیں تو احتجاج کا دائرہ کار ملک بھر میں پھیلایا جایے گا سرکاری دفاتر کا گھیراو کیا جایے گا اور ملک بھر کی اہم شاہراوں کو بند کیا جایے گا۔

Youtube Downloader id

 
 
 
 
     ^واپس اوپر جائیں



سوشل میڈیا لنکس