Jamaat-e-Islami Pakistan | English |

مسئلہ کشمیر پر حکمرانوں کی مجرمانہ بے حسی ایک اور سقوط ڈھاکہ کو دعوت دے رہی ہے ۔ذکراللہ مجاہد


لاہور16 دسمبر2019ء:   امیر جماعت اسلامی لاہور ڈاکٹر ذکر اللہ مجاہد نے کہا ہے کہ 135 دن سے کشمیری مسلمان پاکستان سے محبت کی پاداش میں بھارتی ظلم و بربریت کا شکار قیدو بند میں زندگی گذارنے پر مجبور ہیں جہاں سخت سردی میں ادویات، خوراک کی قلت سے زندگی اجیرن بنچکی ہے ۔ مسئلہ کشمیر پر عالمی برداری اور حکمرانوں کی مجرمانہ بے حسی ایک اور سقوط ڈھاکہ کو دعوت دے رہی ہے ۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے جماعت اسلامی علاقہ شرقی لاہور کے زیر اہتمام سقوط مشرقی پاکستان تقریب ;3939; ایک شام اس لہو کے نام جو پاکستان میں اجنبی ٹھہرا ;3939; میں شرکاء سے خطاب کرتے ہوئے کیا ۔ اس موقع پر ڈپٹی سیکرٹری جماعت اسلامی پاکستان وقاص انجم جعفری، امیر علاقہ شرقی جماعت اسلامی لاہور ڈاکٹر محمود احمد، رہنماء جماعت اسلامی علاقہ شرقی لاہور وقار ندیم وڑاءچ، خبیب نذیر، چوہدری اعجاز آف گاگا سمیت بڑی تعداد میں اہل علاقہ نے شرکت کی ۔ ڈاکٹر ذکر اللہ مجاہد نے مزید کہا کہ سقوط ڈھاکہ بھارتی سازشوں اور اپنوں کی بے وفائی کی وجہ سے پیش آیا جس کی وجہ سے پاکستان کا مشرقی بازو جدا ہو گیا ۔ انہوں نے کہا کہ آج بھی سقوط ڈھاکہ سے ہمارے حکمرانوں نے سبق نہیں سیکھا ۔ آج مقبوضہ جموں و کشمیر میں چار ماہ سے زائد عرصے سے مکمل لاک ڈاون ہے اور بھارتی فوج نے وادی جموں و کشمیر کو دنیا کی بدترین جیل میں تبدیل کردیا ہے جہاں انسانی حقوق اور عالمی قوانین کی کھلے عام خلاف ورزیاں ہو رہی ہے جس پر دنیا بھر کے عالمی اداروں سمیت ہمارے حکمران بیانات کی حد تک محدود ہیں جو قابل مذمت ہے ۔ ڈاکٹر ذکراللہ مجاہد نے کہا کہ بنگلہ دیش سمیت وادی جموں و کشمیر میں بھی جماعت اسلامی پر ظلم کے پہاڑ توڑ جارہے ہیں اور ان کو قیدوبند سمیت پھانسیوں پر لٹکایا جارہا ہے جبکہ ہمارے حکمران اس پر خاموش تماشائی کا کردار ادا کررہے ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ جماعت اسلامی مسئلہ کشمیر کے حل تک چین سے نہیں بیٹھے گی 22 دسمبر کو لاہور سمیت پاکستان سے لوگوں کا سمندر کشمیری مسلمانوں کے ساتھ اظہار یکجہتی اور حکمرانوں
کے ضمیر کو جگانے کیلئے اسلام آباد پہنچے گا ۔

Youtube Downloader id

 
 
 
 
     ^واپس اوپر جائیں



سوشل میڈیا لنکس