Jamaat-e-Islami Pakistan | English |

اہم خبریں

پوری امت مسلمہ کشمیریوں کے شانہ بشانہ ہے،نریندمودی نے کشمیرکی متنازعہ حیثیت ختم کرکے ہندوستان پر خود کش حملہ کیاہے۔سینیٹر سراج الحق


لاہور 8اگست 2019 ء:امیرجماعت اسلامی پاکستان امیر سینیٹر سراج الحق نے کہاہے کہ پاکستان کے 22کروڑ عوام اور پوری امت کی طرف سے کشمیریوں کو یقین دلاتا ہوں کہ صبح آزادی تک ان کے شان بشانہ رہیںگے۔نریندمودی نے کشمیرکی متنازعہ حیثیت ختم کرکے ہندوستان پر خود کش حملہ کیاہے۔کشمیرمیں حق وباطل کا معرکہ برپا ہے فتح حق کی ہوگی۔مودی کی انتہا پسندی نے ہندوستان نواز پارٹی پر بھی آشکار کردیا ہے کہ وہ ماضی میں غلط تھیں۔ جماعت اسلامی نے فیصلہ کیاہے کہ وہ کراچی سے چترال تک کشمیربچاﺅمہم چلائے گی،پاکستان کے عوام کو بیدار کریںگے آج آبپارہ سے بھارت کے ہائی کمیشن تک مارچ کریںگے جمعہ کو پورے ملک میں احتجاج کریں گے۔ان خیالا ت کااظہارانھوںنے اپنے دورہ مظفرآباد کے دوران وزیر اعظم آزاد کشمیرراجہ فاروق حید ر خان کے ہمراہ پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔اس موقع پر جماعت اسلامی پاکستان کے سیکرٹری جنرل امیر العظیم ،جماعت اسلامی آزاد کشمیرکے امیر ڈاکٹرخالد محمود خان ،کنونیئر کل جماعتی کشمیررابطہ کونسل وچیئرمین پبلک اکاونٹس کمیٹی عبدالرشید ترابی،سمیت دیگر قائدین موجود تھے۔

سینیٹر سراج الحق نے کہاکہ اقوام متحدہ کی قراردادوں کے مطابق یہ مسئلہ حل ہوجاتا تو اچھا تھا مگر بھارت کی ہٹ دھرمی نے اس مسئلے کو طویل کیا اب مسئلے کا واحد حل جہاد ہے،انھوںنے کہاکہ جس طرح آزاد کشمیرکے وزیر اعظم نے تمام پارٹیوں کو اعتماد میں لیااور مشترکہ موقف اختیار کیا اسی طرح وفاق کو بھی چاہیئے کہ وہ اس موقع پر قومی اتحاد اور اتفاق کوبرقراررکھے قومی اتحاد قائم رکھنا حکومت پاکستان کی ذمہ داری ہے ،مشترکہ سیشن کے موقع پر میں نے پیپلزپارٹی ،ن لیگ اے این پی جے یو آئی اور دیگر جماعتوںکو کہاہے کہ جب تک کشمیرآزاد نہیں ہوجاتا ہم سب کو ساری سرگرمیاں ترک کر کے کشمیرپر توجہ مرکوز کرنی ہوگی یہ ہماری سلامتی اور بقا کا سوال ہے ،یہ پاکستان کی سلامتی اور استحکام کی جنگ ہے،اگر کشمیری یہ جنگ ہار گئے تو پاکستان بنجر صحرا بن جائے گا،یہاں سے لوگ ہجرت کرنے پر مجبور ہوںگے۔جب تک کشمیرآزاد نہیںہوجاتا ہم کشمیریوں کے شانہ بشانہ رہیںگے،میںوزیر اعظم آزاد کشمیر اور پوری کشمیری قوم کو یقین دلاتا ہوںکہ زندگی کے آخری لمحہ اور خون کے آخری قطرہ تک لڑیںگے اور کشمیریوںکو آزادی دلوائیںگے،اگر جنوبی سوڈان ،مشرقی تیمور آزاد ہوسکتا ہے تو کشمیریوںکو اپنے مستقبل کا فیصلہ کرنے کا حق کیوں نہیں دیاجاتا۔انھوںنے کہاکہ اس نازک مرحلے پر بیس کیمپ اور پاکستان کی حکومت کی ذمہ داری ہے کہ وہ مطلوبہ کردار ادا کریں،حکومت پاکستان فوری طورپر پوری دنیا میں وفود بھیجے اور حمایت حاصل کرے،انھوں نے مطالبہ کیا ہے کہ کشمیرکو تقسیم کرنے کے لیے سیز فائر لائن پر لگائی گئی باڑ کو ختم کیا جائے کشمیریوں کو تقسیم کرنے والی دیوار برلن کی طرز کی دیوار کو کشمیری نہیں مانتے ۔ہندوستان نے خود شملہ معاہدہ توڑ دیاہے اب حکومت بھی اس معاہدے کو مودی کے منہ پر مارے،حکومت نے بھارت کے ہائی کمشنرکو نکالنے اور تجارت ختم کرنے کے اچھے اقدام کیے ہیں مگر یہ ابھی ناکافی ہیں،مزید اقدمات کرنے کی ضرورت ہے،انھوںنے کہاکہ میرا تعلق جس علاقے سے ہے وہاں کے اسلاف نے 1947میں بھی قربانیاں پیش کیںتھیں اور آج بھی تیار ہیں،میں سید علی گیلانی ،میر واعظ عمر فاروق ،یاسین ملک ،شبیر شاہ آسیہ اندرابی اور پوری قوم کو پیغام دیتا ہوںکہ آزاد ی ¿ کشمیر تک آپ کے ساتھ ہیں آپ کو تنہانہیں چھوڑیںگے،پوری پاکستانی قوم اور ملت اسلامیہ آپ کے ساتھ ہے ،اس موقع پر وزیر اعظم راجہ فاروق حید ر خان نے سراج الحق کا شکریہ ادا کیا اور کہاکہ وہ پاکستان کے پہلے لیڈر ہیں جو سب سے پہلے ہمارے پاس آئے ہیں،وہ درد دل رکھتے ہیں،ان کی باتو ں کو من وعن تسلیم کرتاہوں۔

دریں اثنا سینیٹر سراج الحق نے مظفر آباد میں یکجہتی کشمیر کنونشن سے خطاب کرتے ہوئے کہاکہ کشمیری پاکستان کے دفاع کی جنگ لڑ رہے ہیں ۔ اگر کشمیری قوم قربانیاں نہ دیتی تو آج بھارتی فوج مظفر آباد تک پہنچ چکی ہوتی ۔ انڈیا کا ہدف مقبوضہ کشمیر نہیں ، آزاد کشمیر اور پاکستان بھی ہے ۔ انہوںنے کہاکہ آج بھارت نے اپنی ہاں میں ہاں ملانے اور دو قومی نظریہ کی حمایت نہ کرنے والی اس قیادت کو بھی جیل میں ڈالدیا ہے ، جس نے ستر سال تک انڈیا کے گن گائے ۔ انہوں نے کہاکہ 35-A اور 370 کے خاتمہ کے نتیجہ میں آج پوری کشمیری قوم بھارت کے خلاف یک زبان اور متحد ہو گئی ہے ۔ ہم جہاد پر ایمان رکھتے ہیں ،مغرب اور امریکہ کے کہنے پر ہمیں جہاد سے منہ نہیں موڑنا چاہیے ۔ جہاد کی برکت سے ہی آدھا کشمیر آزاد ہوا تھا ، اب جموں و کشمیر اور لداخ بھی مجاہدین کے ہاتھوں بھارتی فوج کا قبرستان بنے گا ۔ انہوںنے کہاکہ حکومتی وزراءاور مشیر موجودہ صورتحال کے باوجود اپوزیشن کے خلاف بیان بازی کر رہے ہیں ۔ ان کے دلوں میں لگی ذاتی مفادات کی آگ انہیں تڑپا رہی ہے ۔ انہوںنے کہاکہ ہندوستان کھوکھلا ہو چکاہے اور زیادہ دیر مجاہدین کشمیر کے سامنے ٹھہر نہیں سکتا۔ اگر پاکستان کو بچانا ہے تو ایل او سی پر لگائی گئی باڑ کو تباہ کرنا اور یوار برلن کو گراناہوگا۔

سینیٹر سراج الحق نے جماعت اسلامی حلقہ خواتین کے زیراہتمام نیو ایم اے جناح روڈ کراچی میں خواتین کے بڑے احتجاجی مظاہرے سے بھی آڈیوخطاب کیا۔

Youtube Downloader id

 
 
 
 
     ^واپس اوپر جائیں



سوشل میڈیا لنکس