Jamaat-e-Islami Pakistan | English |

اہم خبریں

مغربی اور استعماری قوتوں کے زیر سایہ حکمران مدینہ کی ریاست کا نعرہ لگا کر ملک وقوم کو بے وقوف بنا رہے ہیں


لاہور 13جولائی 2019ء:امیر جماعت اسلامی لاہور ذکر اللہ مجاہد نے کہا ہے کہ آئین اور قانون کی بالادستی کے بغیر معاشرے سے کرپشن، بدعنوانی اور جرائم کو ختم نہیں کیا جا سکتا۔آئین اور قانون کی بالادستی کے لیے ضروری ہے کہ انصاف کی فراہمی کے ساتھ ساتھ تعلیم اور ملازمتوں کے مواقع فراہم کیے جائیں۔قانون کی بالادستی اس وقت تک قائم نہیں ہو سکتی جب تک اسے کسی بھی ذات اور تعصب کے بغیر برابری کی بنیاد پر رائج نہیں کیا جاتا۔دوہرے معیار نے ہمیں ترقی یافتہ ممالک کی صف سے بہت دور کر دیا ہے جبکہ تک دوہرے معیار کا کلچر رہے گا قوم پسماندگی اور غربت کی چکی میں پستی رہے گی۔ان خیالات کا اظہار گذشتہ روز انہوں نے دفتر جماعت اسلامی لاہور میں میڈیا کے نمائندوں سے گفتگو کے دوران کیا۔ انہوں نے مزید کہا کہ بے لاگ احتساب کا مطلب کسی کیلئے خاص امتیاز و تفریق نہ ہو جو قانون عام آدمی کیلئے وہی وزیر اعظم، جج، وکیل، جنرل، کرنل سب کیلئے ایک ہو اور جو آئین سرمایہ دار کیلئے ہے‘ وہی ایک مزدور محنت کش کیلئے برابری کی بنیاد پر لاگو ہو یہ مدینہ کی ریاست کے آئین و قانون کا تقاضہ ہے۔ انہوں نے کہا کہ مدینہ کی ریاست بنانے کے دعوے اور وعدے کرنے والے حکمرانوں سے قوم سوال کرتی ہے کہ کب اسلامی نظام کے تحت امیر اور غریب کو انسانی بنیادی حقوق کی فراہمی ہو گی؟ موجودہ حالات میں تو حکومت نے غریب سے دو وقت کی روٹی چھین لی ہے، مہنگائی اور غربت نے لوگوں کا جنیا دوبھر کردیا ہے لوگوں فاقوں اور خود کشیاں کرنے پر مجبور ہو چکے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ اسلامی ریاست کے قیام کیلئے ملک میں اللہ اور رسول سے محبت کرنے قیادت کی

ضرورت ہے مغربی اور استعماری قوتوں کے زیر سایہ حکمران مدینہ کی ریاست کا نعرہ لگا کر ملک وقوم کو بے وقوف بنا رہے ہیں۔

Youtube Downloader id

 
 
 
 
     ^واپس اوپر جائیں



سوشل میڈیا لنکس