Jamaat-e-Islami Pakistan | English |

ارشاد رانجھانی کا ماورائے عدالت قتل حکمرانوں کے منہ پر طمانچہ ہے ۔محمد حسین محنتی


کراچی ٰ 11 فروری 2019 جماعت اسلامی سندھ کے امیر وسابق ایم این اے محمد حسین محنتی نے کراچی بھینس کالونی میں یوسی چیئرمین رحیم شاہ کے ہاتھوں نوجوان ارشاد رانجھانی کو بیدردی کے ساتھ قتل کرنے کے واقعے کی شدید مذمت کرتے ہوئے اسے ماورائے عدالت قتل اور سانحہ ساہیوال کی جھلک قرار دیا ہے، انہوں نے آج ایک بیان میں مزید کہا کہ ملک میں عدالتوں کی موجودگی اور آئین وقانون کے باوجود اس طرح کے واقعات کا رونما ہونا سندھ اور وفاقی حکومت کے منہ پر طمانچہ ہے، کوئی کتنا بھی بااثر اور طاقتور کیوں نہ ہو لیکن اسے قانون ہاتھ میں لینے اور کسی بھی فرد کو بیچ سڑک پر قتل کرنے کی اجازت نہیں دی جاسکتی، اس طرح کے واقعات میں ملوث افراد کو ڈھیل دی گئی تو ملک صومالیا اور شام بن جائے گا، ارشاد رانجھانی کے قتل اور بےدردی سے موت کے گھاٹ اتاردینے کے واقعہ نے پوری قوم کا سرشرم سے جھکادیا ہے، سندھ حکومت رمشا وسان قتل سے ارشاد رانجھانی قتل تک خواب خرگوش میں سوئی ہوئی ہے، سانحہ ساہیوال پر بیان بازی کرنے والے سندھ کے حکمرانوں کیلئے ارشاد رانجھانی قتل ایک ٹیسٹ کیس ہے، انہوں نے مطالبہ کیا کہ حکومت واقعہ کی غیرجانبدرانہ اور شفاف تحقیقات کرکے قاتل اور اسکے سرپرستوں کو عبرت ناک سزا دی جائے، سندھ پولیس نے اس واقعہ میں شرمناک کردار ادا کیا ہے ،ملوث اہلکاروں کو فوری طور پر اپنے عہدوں سے برطرف کرکے انکے خلاف بھی کاروائی کی جائے تاکہ آئندہ اس طرح کے واقعات کا سدباب ہوسکے۔

Youtube Downloader id

 
 
 
 
     ^واپس اوپر جائیں



سوشل میڈیا لنکس