عمران خان سرکار اب ملک کیلئے بوجھ ہے،لیاقت بلوچ

نائب امیر جماعت اسلامی پاکستان و سیکریٹری جنرل ملی یکجہتی کونسل لیاقت بلوچ نے کہا ہے کہ ریاست حکومت اور سیاست کا اختلاف خطرناک شکل اختیار کرتا جارہا ہے ۔ملک کی جمہوری قوتوں کا جھگڑا افواج پاکستان سے نہیں ،اختلاف پیر ا ملٹری اسٹیبلشمنٹ کے سیاسی کردار سے ہے ۔ملک بڑے بحرانوں میں گھرا ہوا ہے ۔قومی ترجیحات پر حکومت سیاست ،ریاست یک آواز نہ ہوئے تو ملک وقوم کو بڑا نقصان اٹھانا پڑے گا۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے لاہور میں ورکرز کنونشن سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔
لیاقت بلوچ نے کہا کہ وزیر اعظم عمران خان کو اللہ کی طرف سے اسٹیٹس کو توڑنے کا موقع ملا ہے ۔قومی سیاست میں ٹھہراﺅ لائیں۔آئین و قانون کی بالا دستی اور حکمرانی کو یقینی بنائیں۔عوام کی بھوک اور افلاس ختم کریں اور ریاست مدینہ کا نظام اپنائیں ۔انہوں نے کہا کہ نااہل اور ناکام ٹولے نے 22کروڑ عوام کے ارمانوں کا خون کردیا ہے ۔عمران خان سرکار اب ملک کیلئے بوجھ ہے ۔ریاستی اداروں اپنی غلطی کا بوجھ آئین میں دیئے گئے طریقہ کار کواختیار کرکے اتارنا ہوگا۔ لیاقت بلوچ نے کہا کہ ماہ ربیع الاول میں فرانس کے صدر میکرون دنیا بھر کے مسلمانوں مذہبی جذبات کی توہین کی ہے ۔یورپ آزادی ¿ رائے کے نام پر صرف اسلام اور شعائر اسلام خصوصا قرآن اور اہل ایمان کی عقیدتوں،وحدت کے مرکز محمد ﷺ کو ٹارگٹ کرکے دل آزاری اور توہین کررہا ہے ۔انہوں نے کہا کہ عالم اسلام کے حکمران غیرت ایمانی کا ثبوت دیں اور شعائر اسلام کی حفاظت کریں۔عالمی سطح پر قانون سازی کیلئے متحدہ کردار ادا کریں۔پوری قوم 30اکتوبر 12ربیع الاول کو تحفظ ناموس رسالت ﷺ کیلئے فرانس کے صدر کے احمقانہ جاہلانہ اور فسادی کردار کے خلاف عظیم دینی جذبات کا اظہار کرے گی۔ لیاقت بلوچ نے کہاکہ جماعت اسلامی کی عوامی جدوجہد ،اسلام کی حکمرانی ،کشمیر کی آزادی ،اتحاد امت ،اسلام کے معاشی نظام کے نفاذ ،سود کے خاتمہ اور ریاست کے نظام کو آئین و قانون کا پابند بنانے کیلئے ہے ۔انہوں نے کہا کہ ملک میں آئین اور پارلیمانی نظام کی کامیابی ریاستی اداروں کی عزت ،صوبوں کے حقوق کے تحفظ اور معاشی وسائل کی منصفانہ تقسیم کیلئے عوام کو منظم اور انقلابی کردار ادا کرنا ہے ۔انہوں نے کہا کہ قیام پاکستان کے مقاصد کے حصول کیلئے جماعت اسلامی کے کارکنان اپنا سب کچھ قربان کرنے کیلئے کمر بستہ ہیں ۔لیاقت بلو چ نے کہا کہ عمران خان سرکارکو کشمیر پر مجرمانہ غفلت کا جواب دینا ہوگا۔اسلامیان پاکستان جموں و کشمیر کی تحریک آزادی کے پشتیبان ہیں۔

-->