Jamaat-e-Islami Pakistan | English |

لیاقت بلوچ قیم جماعت اسلامی

  1. لیاقت بلوچ جنوبی پنجاب کے ایک دور افتادہ علاقے مظفر گڑھ سے تعلق رکھتے ہیں، وہ دسمبر1952ءمیں ملتان میں پیدا ہوئے۔ انہوں نے ایم اے ماس کمیونیکیشن کے علاوہ گریجویشن میں قانون کی ڈگری حاصل کررکھی ہے۔ سکول کے دنوں میں لیاقت بلوچ اسلامی جمعیت طلبہ سے وابستہ رہے۔ ان کی ضلعی اور صوبائی سطح پر مختلف ذمہ داریاں رہیں۔ وہ دودفعہ ناظم اعلیٰ اسلامی جمعیت طلبہ منتخب ہوئے۔ پنجاب یونیورسٹی میں پڑھائی کے دوران انہوں نے طلبہ سیاست میں بھرپور حصہ لیا اور سیکرٹری جنرل کے علاوہ طلبہ یونین کے صدر بھی منتخب ہوئے۔
    1978میں طلبہ حقوق کے تحفظ کاعلمبردار ہونے کے سبب انہیں ایشین سٹوڈنٹ ایسوسی ایشن کا صدر چناگیا۔
    وہ ورلڈ اسمبلی آف مسلم یوتھ(WAMY)اورانٹرنیشنل فیڈریشن آف اسلامک سٹوڈنٹ آرگنائزیشن(IFSR)کے ممبر بھی رہ چکے ہیں۔ایم اے میں پہلی پوزیشن اورگولڈ میڈل حاصل کرنے کے باوجود لیاقت بلوچ نے عملی زندگی کی ابتدا صحافت یالیگل پریکٹس سے کرنے کے بجائے سیاست کے میدان کا انتخاب کیا تاکہ عوام کی خدمت کرسکیں۔ ٹھنڈے اور دوستانہ مزاج کی وجہ سے وہ ملک کے مذہبی اورسیاسی حلقوں میں اچھی شہرت رکھتے ہیں۔ ملک بھر کے مختلف مسلمان مکاتب فکر کے درمیان مصالحتی کوششوں کی بنا پر وہ 1996ءسے 1997ءتک ملی یکجہتی کونسل کے چئیرمین منتخب ہوئے۔
    1994ءسے 1997ءتک جماعت اسلامی پاکستان کے پولیٹیکل بیورو کے سیکرٹری بھی رہے۔ وہ جماعت اسلامی کی اطلاعاتی کمیٹی کے ممبر بھی رہے۔ لیاقت بلوچ دودفعہ لاہور سے قومی اسمبلی کے ممبر منتخب ہوئے۔انہوں نے ایوان زیریں میں پارلیمانی پارٹی کی قیادت بھی کی۔
    جماعت اسلامی کے پارلیمنٹیرین کی حیثیت سے انہوں نے اپنے دو ادوار میں پارلیمانی تاریخ میں بہترین روایات قائم کیں۔رکن کی حیثیت سے پارلیمنٹ میں لیاقت بلوچ نے سائنس اور ٹیکنالوجی پر سٹینڈنگ کمیٹی کی قیادت کی۔انہوں نے پاکستان میں انسانی حقوق کے نیٹ ورک کے قیام میں بنیادی کردار ادا کیا۔ جومعاشرے میں مثبت تبدیلیاں لانے میں اہم کردار ادا کررہا ہے۔ لیاقت بلوچ الخدمت فاؤنڈیشن پاکستان کے صدر بھی ہیں۔لیاقت بلوچ جماعت اسلامی پاکستان کے نائب امیرہونے کے ساتھ ساتھ مئی 09تک جماعت اسلامی صوبہ پنجاب کی ذمہ داری پر فائز رہے۔11مئی 2009ءکو امیر جماعت اسلامی پاکستان سید منورحسن نے مرکزی مجلس شوریٰ کے مشورے سے انہیں قیم جماعت مقرر کیا۔
    لیاقت بلوچ ایران ،چائنہ ،ترکی، روس اور متعدد ایشیائی ممالک کے اعلیٰ سطحی وفود کے ممبر ہونے کی حیثیت سے دورے کر چکے ہیں۔ ا س کے علاوہ جماعت کی طرف سے مختلف سرکاری وغیرسرکاری تنظیموں کی دعوت پر سعودی عرب،ہانگ کانگ، تھائی لینڈ،قطر،متحدہ عرب امارت ،لندن،امریکہ ، کینیڈا، ناروے اور بنگلہ دیش میں کئی ایک بین الاقوامی کانفرنسوں میں شرکت کی غرض سے سفرکرچکے ہیں۔ لیاقت بلوچ نے ملکی سیاست میں ایم ایم اے متحدہ مجلس عمل کے پلیٹ فارم سے اہم قومی اورسیاسی رول ادا کررہے ہیں۔

 
 
 
 
     ^واپس اوپر جائیں

سوشل میڈیا لنکس