Jamaat-e-Islami Pakistan | English |

حقوقِ نسواں کے نام نہاد علمبردار ہی عورت کا تقدس پامال کر رہے ہیں ۔عالمی یومِ خواتین کے موقع پر پیغام


 لاہور 07 مارچ 2017Uء:جماعت اسلامی پاکستان حلقہ خواتین کی سیکرٹری جنرل دردانہ صدیقی نے عالمی یوم خواتین کے موقع پر اپنے ایک پیغام میں کہا ہے کہ عورت دراصل اسلامی تہذیب کا سب سے مستحکم قلعہ ہے جسے خوشنما نعروں کا فریب دے کر اور اس کے اصل اور فطری مقام سے بیگانہ کر کے نہ صرف خاندان بلکہ قوموں کو فنا کرنے کی منصوبہ بندی عالمی سیکیولر قوتوں کا ایجنڈا ہے۔ حقوق نسواں کے نام نہاد علمبردار ہی سب سے بڑھ کر عورت کے تقدس اور وقار کو پامال کر رہے ہیں، آزادی نسواں کے نام پر معاشرتی انتشار کو فروغ دیا جا رہا ہے۔ انہوں نے کہا ہے کہ ایک طرف تو پوری دنیا عالمی یوم خواتین منا رہی ہے اور دوسری طرف فلسطین، کشمیر، افغانستان، عراق، شام اور برما سمیت دنیا کے کئی ممالک میں خواتین پر مظالم کے وہ پہاڑ توڑے جا رہے ہیں کہ دھرتی کانپ اٹھتی ہے۔ خود وطن عزیز پاکستان میں ظالم قبائلی رسومات کا پاس رکھنے کے لیے کتنی ہی بے گناہ خواتین موت سے بدتر زندگی گزارنے پر مجبور ہیں۔ یہ بھی حقیقت ہے کہ عورتوں کے حقوق کے لیے ایک طرف تو این جی اوز کی تعداد میں مسلسل اضافہ ہورہا ہے تو دوسری طرف عورتوں پر تشدد کے واقعات بھی بڑھتے جا رہے ہیں۔ دردانہ صدیقی نے مزید کہا کہ اسلام ہی عورت کے حقوق کا سب سے بڑا محافظ ہے۔ یہ اسلام ہی ہے جس نے عورت کو وہ حقوق عطا کیے جس کی مثال دنیا کے کسی دوسرے مذہب میں نہیں ملتی۔ اسلام میں عورت کو خاندان کا مرکز قرار دیا گیا ہے جبکہ تحریک حقوق نسواں کے ذریعے خاندان کے وجود کو ٹکڑے ٹکڑے کیا جا رہا ہے، اخلاقی بیراہ روی مرد و زن کا آزادانہ اختلاط اور مادہ پرستی کی لہر کو اجاگر کیا جا رہا ہے۔اس طرح کے تصورات نے مرد اور عورت کو باہم متحارب قوت کے طور پہ کھڑا کر دیا ہے۔جو یقیناً خاندان اور نتیجتاً انسانی معاشرے کی تباہی کا سبب ہے۔ ہمیں اس موقع پر اس کلچر کو بدلنا ہوگا اور اسلام کی روشنی میں حقوق کے معیارات طے کرنے ہونگے ۔ہمیں ازواج مطہرات، صحابیات اور صالحات کو اپنا رول ماڈل بنانا ہوگا۔ جن کی پاکیزہ زندگیاں ہی ہمارے لیے نمونہ ہیں اور اسی بات کی اہمیت کو پیشِ نظر رکھتے ہوئے جماعت اسلامی حلقہ خواتین نے سال 2017 کو "خاتون جنت حضرت فاطمہ رضی الل تعالیٰ عنہا "کے نام سے منانے کا فیصلہ کیا ہے۔

 
 
 
 
     ^واپس اوپر جائیں









سوشل میڈیا لنکس