Jamaat-e-Islami Pakistan | English |

حلب میں مسلمانوں کے قتل عام پر عالمی ادارے اور مسلم حکمران خاموش تماشائی بنے ہیں


 پشاور3جنوری2017ء:شام میں مسلمانوں پر ظلم ہورہا ہیں۔حلب کے مظلوم عوام کا بے گناہ خون بہایا جارہا ہیں ۔ جبکہ نام نہاد انسانی حقوق کی تنظیمیں اور مسلم حکمران خاموش تماشائی بن گئے ہیں۔ان خیالات کا اظہار جمعیت طلبہ عر بیہ خیبر پختون خواہ کے سیکرٹری اطلاعات اویس قاسم نے اخباری بیان جاری کرتے ہوئے کیا۔ ان کا مزید کہنا تھا۔کہ جمعیت طلبہ عربیہ شام اور دنیا بھر کے مظلوم مسلمانوں کے ساتھ اظہار یکجہتی کرتی ہیں۔اور جمعیت طلبہ عربیہ حلب کے مظلوم مسلمانوں کے ساتھ ہیں ۔ان کا مزید کہنا تھا کہ مسلمانوں کے لئے ظلم و بربریت اور غلامی سے نجات کا واحد راستہ اتحاد ہیں۔ان کا کہنا تھا کہ حکومت پاکستان سے اور تمام سیاسی پارٹیوں کے رہنماوں سے اپیل ہے کہ حلب ،شام اور روہنگیا کے مظلوم مسلمانوں کے حق میں اور ان پر ہونے والے ظلم کے خلاف عالمی اداروں کے سامنے مظلوم مسلمانوں کے لئے اواز بلند کریں۔ان کا کہنا تھا ، کہ شام ،کشمیر ،برما کیامظلوم مسلمانوں کی حالت کسی سے پوشیدہ نہیں۔لیکن پھر بھی مسلم امہ کے حکمرانوں ااور عالمی اداروں کی خاموشی مجرمانہ غفلت ہیں۔امریکہ مسلمانوں کے صف اول کا دشمن اور عالمی دہشتگرد ملک ہیں۔مسلمانوں پر ہونے والے مظالم امریکہ کے مسلمانوں کے خلاف سازشوں کا حصہ ہیں۔شام اور حلب میں 40لاکھ سے ذاید مسلمان ،خواتین و بچے گھر بار چھوڑنے پر مجبور ہیں۔انہوں نے کہا کہ امریکہ اورفرانس میں ہونے والے مظالم پر اقوام متحدہ فوری حرکت میں اجاتی ہیں،لیکن شام، عراق اور کشمیر کے مظلوم مسلمانوں پر انتہائی ظلم کے باوجود اقوام متحدہ کی خاموشی مجرمانہ کردار ہیں۔

 
 
 
 
     ^واپس اوپر جائیں









سوشل میڈیا لنکس