Jamaat-e-Islami Pakistan | English |

اہم خبریں

نادرا کی ناروا پابندیوں کے باعث عام شہریوں کو شناختی کارڈ حاصل کر نا مشکل ہو گیا ہے ۔حافظ نعیم الرحمن


 کراچی03 جنوری2016ء: امیر جماعت اسلامی کراچی حافظ نعیم الرحمن نے نادرا کی نا اہلی اور ناقص کارکردگی کی مذمت کرتے ہوئے کہا ہے کہ نادرا کی جانب سے شناختی کارڈز کے حصول میں عائد کی جانے والی ناروا پابندیوں اور بلاجواز رُکاوٹوں کے باعث عام شہریوں کے لیے قومی شناختی کارڈ حاصل کر نا انتہائی مشکل اور دشوار ہو گیا ہے بالخصوص بنگلہ دیش سے ہجرت کر کے آنے والے پاکستانیوں اور پختون آبادی کے لیے تو یہ کام ناممکن بنا دیا گیا ہے ۔حافظ نعیم الرحمن نے مطالبہ کیا کہ شناختی کارڈ ز کے حصول میں آنے والی دشواریاں اور پریشانیاں دور کی جائیں اور بنگلہ دیش سے ہجرت کر کے آنے والوں اور پشتو بولنے والوں سمیت تمام شہریوں کو شناختی کارڈز کی فراہمی یقینی بنائی جائے ۔ انہوں نے کہا کہ عوام نادرا کے دفاتر میں روزانہ چکر لگاتے ہیں اور طلوع آفتاب سے بھی قبل کئی گھنٹوں لائین لگاتے ہیں لیکن پھر بھی ان کے لیے قومی شناختی کارڈ حاصل کر نا جوئے شیر لانے کے مترادف بنادیا گیا ہے اور عوام شدید ذہنی و جسمانی اذیت و پریشانیوں کا شکار ہیں ،بالخصوص خواتین کے لیے یہ صورتحال انتہائی تکلیف دہ بن چکی ہے حافظ نعیم الرحمن نے کہا کہ بنگلہ دیش سے آنے والے پاکستا نی سچے اور محبِ وطن شہری ہیں ۔ان لوگوں نے ملک کے لیے بڑی قربانیاں دی ہیں لیکن آج ان کے ساتھ نادرا کا یہ امتیازی سلوک انتہائی افسوسناک ،شرمناک اور قابلِ مذمت ہے اور ان لوگوں کو پاکستان سے بد ظن کر نے اور دور کر نے کی سازش ہے ۔اسی طرح پشتو بولنے والے افراد بھی پاکستان کے شہری ہیں اور زبان یا علاقے کی بنیاد پر کسی کے ساتھ بھی دوہرا معیار اور ناروا سلوک اختیار کر نا کسی طرح بھی مناسب نہیں ہے ۔حافظ نعیم الرحمن نے کہا کہ شناختی کارڈز کے حصول میں آنے والی پریشانیوں اور مشکلات دور کر نے کی جانب سے حکومت اور متعلقہ ادارہ کوئی توجہ نہیں دے رہا اور نادرا دفاتر کے سامنے روزانہ جمع ہو نے والے مردو خواتین کی داد رسی کر نے والا کوئی نہیں ۔

 
 
 
 
     ^واپس اوپر جائیں







سوشل میڈیا لنکس