Jamaat-e-Islami Pakistan | English |

واپس آنے والوں کے ساتھ جنگی قیدیوںجیسا برتاؤ ہورہا ہے۔میرواعظ


سری نگر25جون2012ء: کل جماعتی حریت کانفرنس (میرواعظ گروپ) کے چیئرمین میر واعظ عمر فاروق نے کہا ہے کہ کمان پوسٹ کے ذریعے آزاد کشمیر سے آنے والے لوگوں کے ساتھ جنگی قیدیوں جیسا سلوک کیا جاتا ہے۔ ایک ریاستی اخبار کو انٹرویو میں انہوں نے کہا کہ سرحد پار سے آنے والے کشمیری لوگوں کو یہاں پہنچنے پر بے حد مشکلات کا سامنا کرنا پڑتا ہے، انہیں مختلف سیکورٹی تلاشیوں اور توہین آمیز سلوک کا سامنا کرنا پڑتا ہے، سرحد پر تعینات اہلکار ان کے ساتھ جنگی قیدیوں جیسا سلوک کرتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ آنے والے مہمانوں کو مویشیوں کی طرح بسوں میں ڈالا جاتا ہے۔ بدقسمتی سے ہمارے مہمانوں کو بے عزتی کا سامنا کرنا پڑتا ہے جو کہ ناقابل قبول اور ناقابل برداشت ہے۔ انہوں نے سرحد پار آمدورفت پر نظر رکھنے کیلئے مرکزی کردار کو مسترد کرتے ہوئے مطالبہ کیا ہے کہ مقامی حکام کو یہ کام سونپا جائے، اس میں مرکزی اداروں کا کوئی عمل دخل نہیں ہونا چاہیے۔سرحد پار تجارت کے حوالے سے انہوں نے کہا کہ یہ اپنا مقصد کھو چکی ہے۔ پاکستان سے آنے والی اشیاء کشمیر میں نظر نہیں آتی ہیں، یہ چیزیں سیدھی امرتسر بھیج دی جاتی ہیں۔ انہوں نے نئی دہلی اور اسلام آباد پر تنقید کرتے ہوئے کہا کہ سرحد پار تجارت اور سفر صرف کشمیریوں کی حد تک بحالی ا عتماد کا اقدام تھا جبکہ اسے امرتسر اور اسلام آباد کے درمیان استعمال کیا جارہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ کشمیریوں میں یہ احساس پایا جاتا ہے کہ بھارت مسئلہ کشمیر کے حوالے سے سنجیدہ نہیں ہے۔

 
 
 
 
     ^واپس اوپر جائیں

سوشل میڈیا لنکس