Jamaat-e-Islami Pakistan |

اہم خبریں

بی آرٹی نامکمل ،وزیر اعظم کے افتتاح کے شوق کو پورا کیا جارہا ہے،سینیٹر سراج الحق


لاہور12اگست2020ئ
امیر جماعت اسلامی پاکستان سینیٹر سراج الحق نے کہا ہے کہ کراچی کشمیر ریلی پر بم حملہ کے مجرموں کو ایک ہفتہ گزر جانے کے باوجود گرفتار نہ ہونا سندھ حکومت کی نااہلی کا واضح ثبوت ہے ۔پی ٹی آئی کے وفاقی وزرا کہتے تھے کہ جس جرم کے مجرم گرفتار نہ ہوں حکمران اس کے ذمہ دارہوتے ہیں۔ کشمیری راہنمااسلام آباد کے رویہ سے ناخوش اور سمجھتے ہیں کہ پاکستانی حکمرانوں نے کشمیر نئی دہلی کو پلیٹ میں رکھ کر پیش کردیا ہے ۔بی آرٹی نامکمل ،وزیر اعظم کے افتتاح کے شوق کو پورا کیا جارہا ہے۔لگتا ہے کہ حکمرانوں کو اپنی مدت پوری نہ ہونے کا یقین ہوچکا ہے اس لئے وہ عجلت اور افراتفری میں قدم اٹھا رہے ہیں۔ خریف سیزن میں پانی کی شدید کمی کا خدشہ ہے ۔ کسان کو برباد کرنے کا اعتراف حکومتی وزیر خود کررہے ہیں ۔پنجاب حکومت نے کھادوں پر سبسڈی روک کر زراعت کو تباہ کرنے کا منصوبہ بنایا ہے ۔رفیق تنولی شہید کے قاتل گرفتار نہ ہوئے تو حکومت کو قاتل سمجھا جائے گا۔ان خیالات اظہار انہوں مانسہرہ میں رفیق تنولی کے تعزیتی ریفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔تعزیتی ریفرنس سے نائب امیر جماعت اسلامی اسد اللہ بھٹو ایڈووکیٹ نے بھی خطاب کیا ۔اس موقع پر کسان راہنما ارسلان خان خاکوانی بھی موجود تھے ۔
سینیٹر سراج الحق نے کہا کہ کشمیر ریلی میں ہونے والے دھماکہ کے مجرموں کو ابھی تک گرفتار نہیں کیا جاسکاحالانکہ اس وقت وزیر اعلی نے یقین دہانی کروائی تھی کہ مجرموں کو 24گھنٹے میں گرفتار کرلیا جائے گالیکن وزیر اعظم نے متاثرہ خاندنوں سے ابھی تک اظہار تعزیت تک نہیں کیا۔حکمران شاید کسی اور حادثے کا انتظارکررہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ حکومت نے ابھی تک شہید اور زخمیوں کے خاندانوں کوکوئی مالی امداد دی نہ ان کی اشک سوئی کی گئی۔ حکومت کا اپنے شہریوں کے ساتھ یہ رویہ ناقابل فہم ہے ۔انہوں نے کہا کہ ایک طرف بلوچستان سمیت ملک میں تخریب کاری کے واقعات ہورہے ہیں اور دوسری طرف حکومت کلبھوشن کو رہا کرنے کی تیاریاں کررہی ہے ۔
سینیٹر سراج الحق نے کہاکہ اس وقت حکومت کے خلاف اس وقت کوئی تحریک نہیں لیکن اس کے باوجود حکومت سہمی ہوئی ہے ۔ حکومت کی کوئی سمت نہیں ۔ حکومت کی دوسال کی معاشی پالیسیاں ناکا م ترین پالیسیاں ہیں ۔ معاشی افلاطونوں نے روپے کو کاغذ کا ایک بے وقعت ٹکڑا بنادیاہے ۔ نیب کی کارکردگی پر حکومت اور سپریم کورٹ سمیت کوئی بھی مطمئن نہیں ۔ سپریم کورٹ کہتی ہے کہ نیب نے اپنے کام کی بجائے دوسرے بہت سے کام سنبھال رکھے ہیں ۔ ہم نے پانامہ کے دیگر 436 ملزموں کے خلاف سپریم کورٹ میں رٹ دائر کر رکھی ہے مگر آج تک انہیں سپریم کورٹ نے بلایا نہ نیب نے طلبی کا کوئی سمن جاری کیا ۔ انہوں نے کہاکہ نیب خود قابل احتساب ہے ۔
سینیٹر سراج الحق نے کہا کہ کشمیر ی پاکستان کی تکمیل کیلئے اپنا آج ہمارے کل پر قربا ن کررہے ہیں۔پاکستان کی بقاءسا لمیت اور تحفظ کیلئے کشمیر کی آزادی ناگزیر ہے ،کشمیر ہمارے لئے زندگی اور موت کا مسئلہ ہے مگر حکمرانوں نے آج تک اس پر بیان بازی اور تقریروں کے علاوہ کوئی سنجیدہ قدم نہیں اٹھا یا ۔انہو ں نے کہا کہ کشمیر کی پوری حریت قیادت شاکی ہے کہ پاکستان کے حکمرانوں نے ہمیشہ بھارت کے ساتھ پیار کی پینگیں بڑھانے کیلئے ان کی قربانیوں کو ضائع کیا۔
 

Youtube Downloader id

 
 
 
 
     ^واپس اوپر جائیں




سوشل میڈیا لنکس