Jamaat-e-Islami Pakistan | English |

اہم خبریں

حکمران بلندو بانگ دعوے کر کے صحت وصفائی کے معاملے پر مجرمانہ غفلت چھپانہیں سکتے۔حافظ نعیم الرحمن


کراچی27اکتوبر2019ء: امیر جماعت اسلامی کراچی حافظ نعیم الرحمن نے کہا ہے کہ محکمہ صحت سندھ ،میئر اورکے ایم سی کی ناقص کارکردگی کے باعث مون سون کی بارشوں کے بعد سے شہر بھر میں ڈینگی وائرس میں مسلسل اضافہ ہورہا ہے، کانگواورنگلیریا کے بعد ڈینگی وائرس نے شہریوں کو یرغمال بنالیاہے ۔انہوں نے مزید کہاکہ حکومت کے پاس ڈینگی کی روک تھام کے لیے تاحال کوئی پلان نہیں ہے ،اسپتالوں میں بھی ڈینگی کے مریضوں کا کوئی پرسان حال نہیں اور اب تک 21افراد ہلاک ہوچکے ہیں لیکن حکومت کی جانب سے کوئی ہنگامی اقدامات نظر نہیں آرہے ہیں ،مچھر ،مکھی اور کتوں پر بھی قابو پانے میں ناکام لوگوں کو حکمرانی کا کوئی حق نہیںہے ،مہمات کے نام پر مختص تمام فنڈز نااہلی اور کرپشن کی نذرہورہے ہیں۔انہوں نے کہاکہ حکومت نے اس ہنگامی صورتحال میں شہریوں کے ساتھ ظالمانہ سلوک روارکھا ہوا ہے ،حکمران بلندو بانگ دعوے کر کے صحت وصفائی کے معاملے پر اپنی مجرمانہ غفلت اور نااہلی پر پردہ نہیں ڈال سکتے ،رسمی بیانات اور نمائشی مہمات سے ڈینگی ختم نہیں ہوسکتا ¾سرکاری خرچ پر پریس کانفرنسوں ،سوشل میڈیا اور بیانات سے ڈینگی وائرس کا خاتمہ نہیں ہوگا بلکہ ڈینگی وائرس کے خاتمے کے لیے عملی اقدامات کرنے ہوں گے اور وہ مسائل جن کی وجہ سے ڈینگی میں مسلسل اضافہ ہورہا ہے ان کا مکمل سد باب کرنا ہوگا۔حافظ نعیم الرحمن نے کہا کہ صوبے بھر میں ایمرجنسی نافذ کر کے ڈینگی ٹیسٹ اور ادویات مفت تقسیم کی جائیں اور ڈینگی ہیلپ لائن بھی بنائی جائے ،کروڑوں کمانے والے پرائیوٹ اسپتال بھی اس موقع پر اپنی گنجائش میں اضافہ اور عوام کو مفت سہولت فراہم کریں،اخباری اطلاعات کے مطابق سندھ حکومت ڈینگی کو کنٹرول کرنے کے لیے اب تک کروڑوں روپے کے فنڈز خرچ کرچکی ہے لیکن وائرس پر قابو پانے میں ناکام ہوگئی ہے ،رواں سال شہر میں 7040افراد ڈینگی بخارمیں مبتلا ہوچکے ہیں ۔انہوں نے مزید کہا کہ شہر میں ڈینگی مچھروں کے خاتمے کے لیے مو ¿ثر کارروائی نہ کیے جانے کے سبب شہر بھر میں ڈینگی وائرس بے قابو ہوگیا ہے اور ڈینگی کے کیسز رپورٹ ہونے کی شرح میں خطرناک حد تک اضافہ ہوگیا ہے ۔حافظ نعیم الرحمن نے کہاکہ ماہرین کی جانب سے ڈینگی کی ایک وجہ یہ بھی بتائی جارہی ہے کہ شہرمیں گندگی اور غلاظت کے ڈھیروں اور سیوریج نظام خراب ہونے کے سبب بھی ڈینگی مچھروں کی افزائش میں غیر معمولی اضافہ ہوگیا ہے لیکن متعلقہ انتظامیہ کی جانب سے بھی مچھروں کی افزائش روکنے کے لیے کسی قسم کے اقدامات نہیں کیے جارہے ہیں ، جگہ جگہ گندگی اور غلاظت کے ڈھیر بدستور موجود ہیں دوسری جانب مچھر مارادویات کا چھڑکاو ¿ بھی نہیں کیا جارہا ہے جبکہ مچھروں کی بھرمار ہوجانے کے باعث شہری بخار میں مبتلا ہورہے ہیں۔ انھوں نے کہا جو حکمران مکھی مچھر اور کتوں پر بھی قابو نہ پاسکیں ان نا ااہلوں کو اقتدار میں رہنے کا کوئی حق نہیں۔#

Youtube Downloader id

 
 
 
 
     ^واپس اوپر جائیں



سوشل میڈیا لنکس