Jamaat-e-Islami Pakistan | English |

اہم خبریں

آئینی اعتبار سے تمام ادارے اپنی حدود میں رہ کر کام کریں گے تو ملک آگے بڑھ سکے گا۔جاوید قصوری


لاہور24اکتوبر2019ء:امیر جماعت اسلامی صوبہ وسطی پنجاب وصدر ملی یکجہتی کونسل وسطی پنجاب محمد جاوید قصوری نے کہا ہے کہ آئین و قانون کے دائرہ کار میں رہتے ہوئے ہر شخص اورسیاسی پارٹی کو احتجاج کا حق حاصل ہے۔ حکومت غیر یقینی کی صورتحال پیدا کرکے اپنے لیے ہی مشکلا ت کھڑی کررہی ہے۔ مخالفین کو  ڈرانے دھمکانے کے لئے سیاسی بیانات میں غیر جمہوری قوت کی حمایت کا بر ملا اظہار آئین سے انحراف کے مترادف ہے۔ آئینی اعتبار سے تمام ادارے اپنی حدود میں رہ کر کام کریں گے تو ہی ملک آگے بڑھ سکے گا۔ ان خیالات کا اظہار انھوں نے گزشتہ روز لاہور میں مختلف تقریبات سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ انھوں نے کہا کہ ایک سوچی سمجھی سازش کے تحت ملک کو غیر واضح صورتحال اور بے یقینی کیفیت کی طرف دھکیلا جارہا ہے۔ ملک میں ایک مرتبہ پھر 90کی دہائی والی سیاست کا آغاز کردیا گیا ہے۔ ماضی کے حکمرانوں نے،ملک و قوم کو سترہ برسوں تک امریکی جنگ میں جھونک کر،ناقابل تلافی نقصان کیا ہے۔ ملک اب مزید عدم استحکام کا متحمل نہیں ہوسکتا۔ انھوں نے کہا کہ پاکستان نازک دور سے گزر رہا ہے۔ سیاسی قیادت کو غیر دانشمندانہ فیصلوں سے اجتناب کرنا چاہیے۔ جمہوریت خطرے میں پڑسکتی ہے۔ حکومتی اقدامات کے خلاف آواز اٹھانا جمہوری قوتوں کا حق ہے اور اس کو چھینا نہیں کیا جاسکتا۔ حکمرانوں نے اگر 14ماہ میں عوام کو ریلیف دیا ہوتا اور اپنے وعدوں میں سے کسی ایک پر بھی عمل در آمد کیا ہوتا تو آج عوام اور سیاسی جماعتیں سڑکوں پر نہیں ہوتیں۔ محمد جاوید قصوری نے اس حوالے سے مزید کہا کہ حکومتی وزراء اپوزیشن کو دھمکیاں دینے کی بجائے اپنی کارکردگی پر توجہ دیں تو حالات خود بخود ٹھیک ہوجائیں گے۔ حکومت کے نادان دوست خود عمران خان کے لیے مسائل پیدا کررہے ہیں۔ ملک وقوم کو اس وقت دشمن کے مقابلے میں جس اتحاد و یکجہتی کو مظاہرہ کرنا چاہیے تھا وہ حکمرانوں کی غیر پیشہ ورانہ صلاحیتوں اور غیر سنجیدگی کی نذر ہوگئی ہے۔

Youtube Downloader id

 
 
 
 
     ^واپس اوپر جائیں



سوشل میڈیا لنکس