Jamaat-e-Islami Pakistan | English |

اہم خبریں

ہماری عسکری قوت اور تیاری صرف اور صرف بھارت کے لیے ہے، اس کو ہر جارحیت کا منہ توڑ جواب دیا جائے گا ۔میاں اجمل حسین


فیصل آباد/22اکتوبر2019ء:جماعت اسلامی حلقہ پی پی115کے امیر میاں اجمل حسین بدرایڈووکیٹ اورجنرل سیکرٹری یوسف گل پراچہ نے کہا ہے کہ انڈیا کی جانب سے لائن آف کنٹرول (ایل او سی) کے قریب وادی نیلم میں فائرنگ سے شہادتیں قابل مذمت ہیں ۔ بھارت نے غیر اعلانیہ جنگ کا آغاز کردیا ہے ۔ ہماری عسکری قوت اور تیاری صرف اور صرف بھارت کے لیے ہے ۔ اس کو ہر جارحیت کا منہ توڑ جواب دیا جائے گا ۔ پاکستان کو تر نوالہ سمجھنے والے احمقوں کی جنت میں رہتے ہیں ۔ کشمیر کے لیے ہم ہر حد تک جاسکتے ہیں ۔ اجمل حسین بدرنے کہا کہ 78 دنوں سے جاری کرفیو نے دنیا کے کردار پر سوالیہ نشان کھڑا کردیا ہے ۔ پاکستان کے 22 کروڑ عوام پاک فوج کی پشت پر کھڑے ہیں ۔ بھارت کو مقبوضہ جموں و کشمیر میں شرانگیزی کا منہ توڑ جواب دیا جانا چاہیے ۔ بھارتی پارلیمنٹ سے آرٹیکل 370 اور 35 اے کے خاتمے کے بعد جنوبی ایشیا میں ایٹمی جنگ کے خطرات بڑھ گئے ہیں ۔ دنیا کو دکھانے کے لیے سیکولر ازم کا نعرہ لگانے والی بھارت کی نسلی عصبیت کا شکار قیادت مسلسل جنوبی ایشیا کے امن کے لیے سنگین خطرہ بنی ہوئی ہے ۔ امریکا اور یورپی ممالک کو مسلمانوں کے حوالے سے اپنے دوہرے معیارات بدلنے ہوں گے ۔ انہوں نے کہا کہ 1989ء سے اب تک ایک لاکھ کشمیری شہید اور 20,000 ہزار خواتین بیوہ ہوچکی ہیں ۔ لاکھوں بچے یتیم ہوگئے ہیں ۔ بھارتی مظالم کا سلسلہ ختم ہونے کا نام نہیں لیتا ۔ عالمی برادری جلد اس مسئلے کا ایسا پائیدار حل نکالے جو 3 کروڑ کشمیریوں کو قابل قبول ہو ۔ یوسف گل پراچہ نے کہاکہ بھارت اگر کشمیری عوام پر مظالم کے پہاڑ توڑ رہا ہے، تو اس میں اصل قصور ان عالمی اداروں اور طاقتوں کا ہے جو مسلمانوں کے ساتھ دوہرا معیار اور معاندانہ رویہ اختیار کیے ہوئے ہیں ۔

۔ ۔ ۔ ۔ ۔ ۔ ۔ ۔ ۔ ۔ ۔ ۔ ۔ ۔ ۔ ۔ ۔

اگر کشمیر کی آزادی کیلیے حکومت پاکستان نے عملی اقدامات نہ کیے تو بھارت کا اگلا ٹارگٹ آزاد کشمیر ہو گا ۔ عبدالستاربیگا

فیصل آباد( )جماعت اسلامی حلقہ پی پی114کے امیر میاں عبدالستاربیگا،جنرل سیکرٹری چوہدری نویداسلم نے کہا ہے کہ بھارت کا جنگی جنون خطے کے امن کو تباہ کرنے کی مذموم سازش ہے ۔ بھارت کی وادی جموں و کشمیر کی قانونی حیثیت ختم کرنے کے بعد مسلسل ملکی سرحدوں اور آبادیوں پر بلا اشتعال فائرنگ اور عالمی جنگ بندی کی خلاف ورزیاں ناقابل برداشت ہو چکی ہیں ۔ اگر کشمیر کی آزادی کیلیے حکومت پاکستان نے عملی اقدامات نہ کیے تو بھارت کا اگلا ٹارگٹ آزادی کشمیر ہو گا ۔ عبدالستاربیگا نے کہا ہے کہ بھارت کی جانب سے ایل او سی پر معصوم شہریوں کو نشانہ بنانا خطے کا امن تباہ کرنے کی مذموم سازش ہے ۔ آرٹیکل 370 اور 35 اے کے خاتمہ کے بعد اب ایل او سی سیز فائرلائن بن گئی ہے اور تمام جنگی اور امن معاہدے ختم ہوگئے ۔ مسئلہ کشمیر کے حل کے بغیر خطے میں امن کا خواب پورا نہیں ہو سکتا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ مسئلہ کشمیر زمینی حقائق نہیں ملکی سلامتی اور بقا کا مسئلہ ہے ۔ کشمیری مسلمان ستر سال سے پاکستان کی بقا کی جنگ لڑ رہے ہیں ۔ مسلسل 79 دن سے وادی جموں و کشمیر دنیا کی بدترین جیل بن چکی ہے ۔ جہاں انسانوں کے ساتھ جانوروں سے بھی بدتر سلوک کیا جارہا ہے ۔ وادی جموں کشمیر میں گھر گھر تلاشی کی آڑ میں خواتین اغوا کر کے ان کی عزتوں کو تار تار کیا جارہا ہے اور ہمارے حکمران سیاسی شہیدوں بننے کیلیے تقریروں کے جہاد میں مصروف عمل ہیں جو قا بل مذمت ہے ۔ جماعت اسلامی کے رہنماءوں نے حکومت پاکستان سے مطالبہ کیا کہ مسئلہ کشمیر پرکسی قسم کی سودے بازی نہ تو کشمیری قوم کو قبول ہو گی اور نہ ہی کسی غیور پاکستانی کو اس لیے بھارت کو اینٹ کا جواب پتھر سے دیا جائے اور کشمیریوں مسلمانوں کی عملی مدد کیلیے وادی میں باڑ کو فی الفور ختم کیا جائے اور بھارت کو اس کی زبان میں اینٹ کا جواب پتھر سے دیا جائے پوری پاکستانی قوم ملکی دفاع اور کشمیر کی آزادی کیلیے پاک فوج کے شانہ بشانہ کھڑی ہے

Youtube Downloader id

 
 
 
 
     ^واپس اوپر جائیں



سوشل میڈیا لنکس