Jamaat-e-Islami Pakistan | English |

اہم خبریں

بلوچستان یونیورسٹی میں طالبات کو ہراساں کرنے والوں کو سخت سزا دی جائے۔ جماعت اسلامی خواتین


کراچی /کوئٹہ19 اکتوبر 2019ء: جماعت اسلامی پاکستان حلقہ خواتین کی ڈپٹی سیکریٹری جنرل وسابق رکن صوبائی اسمبلی ثمینہ سعید اور ناظمہ صوبہ بلوچستان شازیہ عبد اللہ نے بلوچستان یونیورسٹی میں طالبات کے ساتھ ہراسانی کے واقعات کی شدید الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے ملوث عناصر کو کڑی سزا دینے کا مطالبہ کیا ہے۔ خواتین رہنماؤں نے معاملے کو منطقی انجام تک پہنچنے تک یونیورسٹی کے وائس چانسلر و دیگر اعلیٰ عہدیداران کی برطرفی کا بھی مطالبہ کیا۔ اپنے ایک بیان میں انہوں نے کہا کہ ہم متاثرہ طالبات کے ساتھ ہیں اور ان کی ہر قسم کی اخلاقی و قانونی معاونت کریں گے۔ خواتین رہنماؤں نے کہا کہ اس حساس معاملے پر اعلیٰ عدلیہ کا سو موٹو نوٹس لینا خوش آئند ہے مگر اس کیس کو جلد از جلد منطقی انجام تک بھی پہنچنا چاہیے، نہ کہ سرد خانے میں ڈال دیا جائے۔ انہوں نے مزید کہا کہ ایسے واقعات  کے بعد والدین اپنی بچیوں کو حصول تعلیم کے لیے بھیجنے پر تحفظات کا شکار ہیں۔معاشرے میں ایک طرف خواتین کے لیے تعلیم کا مطالبہ کیا جاتا ہے اور دوسری طرف طالبات کے لیے تعلیم کا حصول مشکل بنایا جارہا ہے

Youtube Downloader id

 
 
 
 
     ^واپس اوپر جائیں



سوشل میڈیا لنکس