Jamaat-e-Islami Pakistan | English |

جہاد کے خلاف فتوے دینے اورمظلوم کشمیریوں کی مدد کی بجائے بزدلی دکھانے والا ، ٹیپوسلطان کیسے ہوسکتا ہے۔ امیرالعظیم


لاہور14اکتوبر2019ء:سیکرٹری جنرل جماعت اسلامی پاکستان امیرالعظیم نے کہاہے کہ جہاد کے خلاف فتوے دینے اورمظلوم کشمیریوں کی مدد کی بجائے بزدلی دکھانے والے وزیراعظم، ٹیپوسلطان کیسے ہوسکتے ہیں جماعت اسلامی نے آزادی کشمیرکے لئے ہرموقع پر بڑی سے بڑی قربانی دی آج بھی ہم مظلوم کشمیری عوام کے پشتیبان ہیں۔ 16اکتوبرکو اسلام آباد میں کشمیری خواتین کا آزادی کشمیرمارچ ہوگا۔ ان خیالات کااظہارانھوں نے جماعت اسلامی ضلع راولپنڈی کے اجتماع ارکان وامیدواران سے خطاب اور ذمہ داران سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔اجتماع سے امیرصوبہ شمالی پنجاب ڈاکٹرطارق سلیم،صوبائی ڈپٹی سیکرٹری جنرل ڈاکٹرحمیداللہ ملک،امیرضلع راجہ محمدجواد،ضلعی سیکرٹری سیدامجدحسین شاہ ،صدرسیاسی کونسل شمس الرحمن سواتی نے بھی خطاب کیا ۔ اجتماع میں ذمہ داران اورضلع بھرسے ارکان وامیدواران شریک تھے ۔اجتماع میں تمام ارکان سے تجدیدرکنیت کا حلف لیا گیا۔

امیرالعظیم نے کہاکہ پاکستان اورکشمیر کے عوام نے سینٹرسراج الحق کی قیادت میں ہونے والے کشمیرمارچ کی سیریزمیں بھرپورشرکت کرکے ثابت کردیا کہ وہ کشمیرکی سودے بازی کوکسی صورت قبول نہیں کریں گے۔ ایوان اقتدار میںغیرتمند حکمرانوں کی ضرورت ہے جونہ صرف پاکستان بلکہ کشمیرکے بارے میں جرات سے فیصلے کریں ۔انھوں نے کہاکہ جماعت اسلامی کی دونسلیں گزرگئیں اس دوران اس کے سینکڑوں کارکنان نے اسمبلی ممبران ،وزراء،مئیرزکی صورت عوامی خدمت کی لیکن کسی ایک کے دامن پرکوئی داغ نہیں ،ایوان اقتدارمیں جاتے ہیں اسی سفید بے داغ شفاف دامن کے ساتھ سبکدوش ہوکرگھرچلے جاتے ہیں بدترین سیاسی حریف بھی آج تک جماعت اسلامی کے کارکنان پر انگلی نہیں اٹھا سکا۔ انھوں نے اسلام اورپاکستان کی خدمت اور عوام کے مفاد کی سیاست کی۔ڈاکٹرطارق سلیم نے کہاکہ حکومت کی غلطیاں ریاستوں کی تباہی کا باعث بنتی ہیں ،فحاشی وعریانی ،سودی نظام اورحکمرانوں کی عالمی شیطانوں کی غلامی کے خلاف ہماری جدوجہد جاری رہے گی ۔عہدرکنیت کا تقاضا ہے کہ اسلام کی تعلیمات پر عمل کیا جائے ۔

 

Youtube Downloader id

 
 
 
 
     ^واپس اوپر جائیں



سوشل میڈیا لنکس