Jamaat-e-Islami Pakistan | English |

اہم خبریں

دینی مدارس کے بنک اکاﺅنٹس منجمد کرنا کھلی جارحیت ہے ، حکمرانوں کو یہ اقدام بہت مہنگا پڑے گا۔امیرالعظیم


لاہور 7   0اکتوبر2019ء:سیکرٹری جنرل جماعت اسلامی پاکستان امیر العظیم نے حکومت کی طرف سے ملک بھر میں مختلف مدارس کے بنک اکاﺅنٹس منجمد کرنے کی اطلاعات پر گہری تشویش کا اظہار کرتے ہوئے اسے دینی مدارس اور طلباءکے خلاف کھلی جارحیت قرار دیا ہے ۔انہوں نے کہا کہ دینی مدارس میں 35لاکھ کے قریب طلباءو طالبات زیر تعلیم ہیں جن میں سے اکثریت قرآن حفظ کرنے والوں کی ہے ۔حکومت کی طرف سے مدارس کے اکاﺅٹس منجمد کرنے کی کاروائی بغیر کسی پیشگی اطلاع کے کی جارہی ہے جس سے ان مدارس کے لئے روزانہ کے اخراجات پورا کرنا بھی ممکن نہیں رہااور حکومت کی اس فسطائیت سے مدارس میں رہائش پذیر ہزاروں طلباءو طالبات کیلئے دووقت کے کھانے انتظام کرنا بھی مشکل ہوگیا ہے۔ قرآن و حدیث کے طلباءکے ساتھ حکومت کا یہ ظلم و جبر ناقابل برداشت ہے ۔انہوں نے کہا کہ حکمرانوں کو یہ اقدام بہت مہنگا پڑے گا۔امیر العظیم نے مطالبہ کیا کہ حکومت فوری طور پر مدارس کے اکاﺅنٹس کو بحال کرے ۔حکومت نے مدارس کے ساتھ اپنا معاندانہ رویہ تبدیل نہ کیا تواسے شدید احتجاج کا سامنا کرنا پڑے گا۔ 

Youtube Downloader id

 
 
 
 
     ^واپس اوپر جائیں



سوشل میڈیا لنکس