Jamaat-e-Islami Pakistan | English |

اب وقت جہاد آن پہنچا ہے ،حکومت جتنی جلدی ہوسکے جہاد کا اعلان کرے۔محمد الطاف


 

لاہور6/ستمبر2019ء:منتظم اعلیٰ جمعیت طلبہ عربیہ پاکستان محمد الطاف نے کہا ہے کہ اقوام متحدہ میں بہت ساری یادداشتیں دستخط کر لی گئی ہیں اور 70 سالوں سے تقریروں کا سلسلہ بھی جاری ہے اب وقت جہاد آن پہنچا ہے ،حکومت جتنی جلدی ہوسکے جہاد کا اعلان کرے،تحریک انصاف کی حکومت اقوام متحدہ کی تقریر کے سحر اور لذت بے عمل کے ماحول سے باہر آئے کب تک عوام کو تقریروں میں بیوقوف بنایا جاتا رہے گا،حکومت سے مطالبہ ہے کہ عالمی برادری اور عالم اسلام کے عدم تعاون کی فکر کریںچالاک دشمن نے پہلے ہمارے کشمیری بھائیوں کے حقوق پر ڈاکہ ڈالااور پھر ہمارے بھائیوں کو بڑی چالاکی سے ایک بڑی جیل میں بند کر رکھاہے, مقبوضہ کشمیر میںجو قتل عام ہو رہا ہے وہ ظلم کی المناک داستان ہے، مسلمانوںکواللہ نے ایک جسم کی مانندبیان فرمایا ہے مگریہ کون سے بین الاقوامی قوانین ہیںکہ مسلمان کوہرجگہ بربریت کانشانہ بنایا جارہا ہے۔ کشمیر میں بڑھتی ہوئی  بھارتی جارحیت کونہ روکا گیا توپوری دنیاکاامن خطرے میںپڑ جائے گاایسی اسلام دشمن قوتوںکولگام ڈالنے اوران سے نپٹنے کے لئے مسلم امہ کواتحادویکجہتی کامظاہرہ کرناہوگا۔ کشمیری مسلمانوںکی مددکرنے کے اپنی اپنی حد تک کرداراداکرنا چاہئے۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے جماعت اسلامی لاہور کے زیر اہتمام مال روڈ پرلاکھوں اہلیان لاہور کے سامنے آزادی کشمیر مارچ سے خطاب کرتے ہوئے کیا منتظم اعلیٰ جمعیت طلبہ عربیہ پاکستان محمد الطاف نے مزید کہا کہ کشمیر میں انسانیت کے ساتھ ہوشربا انتہائی ظالمانہ اور سفاکانہ ظلم رواں رکھا جا رہا ہے اسے کوئی درد دل رکھنے والا شخص نہیں دیکھ سکتا،اس کئے جانے والے ظلم کی جتنی بھی مذمت کی جائے کم ہے، انسانیت کے ساتھ جو بھارتی فوج کی طرف سے ظلم و بربریت کی جا رہی ہے جسے دیکھ کر دل خون کے آنسو رونے پر مجبور ہو جاتا ہے، اسلامی ممالک اور ان میں بسنے والے مسلمانان عالم اس وقت کہاں ہیں،یہ ایک سوالیہ نشان ہے،انہوں نے مزید کہا کہ تاریخ توہمیں بھول جائے مگرہمارارب ہم سے ضرورپوچھے گاجب ارض زمین پرفسا برپا کیا گیاتھاتوتم نے اس فساد کوختم کرنے میں کیا حصہ ڈالاتھا۔کشمیر پر عالمی برادری سمیت کسی مسلمان حکمران کاضمیرنہ جاگ سکا بس سب نے اقوام متحدہ میں آکر تقریریں کی اور چلے گئے کسی نے بھی اس حﷺالے سے کوئی عملی اقدام نہیں اٹھایا ،کشمیر سمیت متعددمسلم ممالک میںمسلمانوںکے خلاف انسانیت سوزکاروائیاں کی جارہی ہیںاورکوئی ان کے زخموںپرمرہم رکھنے والا کوئی نہیں۔انہوں نے کہا کہ اس ظم کو جاری ہوئے کافی عرصہ گزر چکا ہے مگر کسی اسلامی ریاست کے نمائندوں کی طرف سے کوئی ایک مذمتی لفظ بھی نہیں کہا گیا، انہوں نے مزید کہا کہ مسلمانوں کی آپس میں نا اتفاقی کی بدولت طاغوتی قوتوں نے دہشت گردی کے نام پر مسلمانوں کے ہاتوں مسلمانوں کا قتل عام شروع کر وا رکھا ہے اور ایسے مظالم روا رکھے جا رہے ہیں جنہیں دیکھ کر انسانیت بھی شرما جاتی ہے، بچوں، بوڑھوں اور خواتین کا قتل عام روز کا معمول بن چکا ہے، بچوں بوڑھوں، عورتوں اور جوانوں کو گاجر مولی کی طرح کاٹ کر خون مسلم کی ندیاں بہائی جارہی ہیں، خواتین اور نو عمر بچیوں کی عصمت دری کی جارہی ہے، منتظم اعلیٰ محمد الطاف نے مزید کہا کہ مسلمانوں کی آپس میں نا اتفاقی نے اسلام دشمن قوتوں کو حوصلہ دیا ہے مکار دشمنوں نے مسلمانوں کو ہی آلہ کار بنا کر ان کے ہاتھوں مسلمان بھائیوں کو ملیا میٹ کروایا ہے، ان تمام حالات میں اسلامی تعلیمات پر عمل پیرا ہو کر مسلم امہ کا اتحاد وقت اہم ضرورت ہے اور مصیبتوں، پریشانیوں سے چھٹکارے کا حل اسلامی تعلیمات میں عمل پیرا ہونے پر مضمر ہے۔

 

Youtube Downloader id

 
 
 
 
     ^واپس اوپر جائیں



سوشل میڈیا لنکس