Jamaat-e-Islami Pakistan | English |

ملک کے منافع بخش ادارے سابقہ و موجودہ حکمرانوں کی نااہلی کے باعث شدید خسارے میں ہیں۔جاویدقصوری


لاہور14/ستمبر2019ء:امیرجماعت اسلامی صوبہ وسطی پنجا ب محمد جاوید قصوری نے کہا ہے کہ ملک کے منافع بخش ادارے،این ایچ اے 133ارب،ریلوے 41، پی آئی اے 40ارب، اسٹیل مل 14ارب اورشعبہ توانائی 130ارب روپے کے خسارے میں ہیں۔ 22کروڑ آبادی میں صرف14فیصد شہری ایسے ہیں جن کے پاس پبلک اور پرائیویٹ سیکٹر میں باقاعدہ ملازمتیں ہیں۔ان خیالات کا اظہارانہوں نے عوامی وفود سے   گفتگو کرتے ہوئے کیا۔انہوں نے کہاکہ بھٹہ پر35فیصد،زرعی شعبہ میں 48.6فیصد،قالین سازی میں 62فیصد اور غیر رسمی شعبے میں 85.8فیصد مزدور مردوخواتین کام کررہے ہیں۔انہوں نے کہاکہ جاگیرداری نظام ہمارے ملک کی جڑوں کوکھوکھلا کررہا ہے اور حکمران تمام ترکوششوں کے باوجود اس کو ختم کرنے میں ناکام ثابت ہوئے ہیں۔گزشتہ72برسوں سے محنت کش طبقے کااستحصال کیاجارہا ہے۔سرمایہ داری نظام بھیانک شکل میں آچکا ہے اور وطن عزیز میں حالات بدسے بدترہوتے جارہے ہیں۔جان لیوامہنگائی نے تمام شعبہ ہائے زندگی سے تعلق رکھنے والے افراد کی قوت خرید کوبری طرح متاثر کیا ہے۔انہوں نے مزیدکہاکہ اس وقت پاکستان میں مزدوروں سے متعلق اہم لیبر قوانین میں فیکٹریزایکٹ1993،پنجاب انڈسٹریل ریلشنز ایکٹ2010،معاوضہ جات کاقانون 1923،تنخواہوں کی ادائیگی کاایکٹ1936،کم ازکم اجرت آرڈیننس1961،ایمپلائزسوشل سیکیورٹی آرڈیننس1965اور ایمپلائزاولڈ ایج بینیفٹ ایکٹ1976لاگوہیں۔بدقسمتی سے قانون سازی کے باوجود ان پر عمل درآمد نہیں ہورہا۔محنت کش اور مزدورکسی بھی ملک کی صنعتی ومعاشی ترقی میں ریڑھ کی ہڈی کی حیثیت رکھتے ہیں۔مزدور خوشحال ہوگا توملک خوشحال ہوگا۔ محمد جاوید قصوری نے مطالبہ کیاکہ مزدوروں کے بچوں کومفت تعلیم اورصحت کی سہولیات فراہم ہونی چاہئیں،انہیں مالکانہ حقوق پر مفت رہائشی سہولیات فراہم کی جائیں۔ قوم منتظر ہے کہ پچاس لاکھ گھر اور ایک کروڑ نوکریاں دینے کا وعدہ کب پور ا ہو گا۔

Youtube Downloader id

 
 
 
 
     ^واپس اوپر جائیں



سوشل میڈیا لنکس