Jamaat-e-Islami Pakistan | English |

اہم خبریں

عزت، غیرت اور جرات کے ساتھ جینے کا سلیقہ کوئی افغانوں سے سیکھے،حق کے معیار پر قائم رہنا ہی اصل کامیابی ہے۔لیاقت بلوچ


کراچی  11/ستمبر2019نائب امیر جماعت اسلامی پاکستان لیاقت بلوچ نے کہا ہے کہ حق کے معیار پر قائم رہنا ہی اصل کامیابی ہے، عزت، غیرت اور جرات کے ساتھ جینے کا سلیقہ کوئی افغانوں سے سیکھے جنہوں نے کسی اقوام متحدہ، اوآئی سی کو پکارنے کی بجائے ایک اللہ پر توکل اور حق کے معیار پر قائم رہتے ہوئے امریکہ واتحادیوں کو شکست دی، آخری گولی،آخری جوان اور آخری حد تک جانے والے عزم کا خیرمقدم کرتے ہیں مگر اس کیلئے پہلا قدم ضروری ہے۔حکومت کی مسئلہ کشمیر کے حل کیلئے سفارتی کوششیں ناکام ثابت ہوئی ہیں، وزیراعظم اور وزیرخارجہ بیرون دنیا دورے کرکے بھارت کا مکروہ چہرہ بے نقاب کرتے ،حکومت مسئلہ کشمیر پر اب تک کوئی متفقہ پالیسی بھی نہیں دے سکی ہے، پوری قوم کشمیر کیلئے سب کچھ قربان کرنے کیلئے تیار ہے، کشمیری عوام پاکستان کے منتظر ہیں، افغانستان کی سرزمین پر امریکہ شکست کھاچکا ہے، امریکہ کی طرح بھارت واسرائیل بھی ذلت سے دوچار ہوںگے کیوں کہ افغانستان میں امریکہ کی شکست دراصل بھارت واسرائیل کی شکست ہے۔15ستمبر کو کوئٹہ میں سینیٹر سراج الحق کی قیادت میں کشمیر مارچ ہوگا۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے کراچی، شہداد پور، ٹنڈوالہیار اور ٹنڈومحمد خان میں ضلعی تربیتی اجتماعات سے خطاب اور میڈیا سے بات چیت کے دوران کیا، اس موقع پر صوبائی سیکریٹری اطلاعات مجاہد چنا ودیگر مقامی ذمہ داران بھی موجود تھے۔ لیاقت بلوچ نے مزید کہا کہ 2018کا الیکشن دھاندلی زدہ اور عوام کی امنگوں پر شب خون مارا گیا،دینی جماعتوں کا راستہ روکا گیا مگر اس کے باجود پی ٹی آئی حکومت کو موقع دیا گیا، ایک سال کی حکومتی کارکردگی سے ثابت ہوگیا کہ تبدیلی کا دعویٰ محض دھوکہ تھا۔سودی لعنت نے معیشت تباہ ،بیرونی قرضوں سے ملک آئی ایم ایف کا غلام،مہنگائی نے عوام کا جینا دوبھر کردیا ہے،احتساب انتقام میں تبدیل ،ہر آنے والا دن قادیانیت وبے حیائی کے کلچر کو فروغ دے رہا ہے، ریاست مدینہ کے جتنے بھی اصول ہیں اسکے الٹ کام کیا جارہا ہے۔انہوں نے ایک سوال کے جواب میں کہا کہ طالبان امریکہ مذاکرات کے خاتمے سے یہ سودہ امریکہ کیلئے تباہ کن ثابت ہوگا،امریکہ شکست کھاچکا وہ مذاکرات کے نام پر صرف فیس سیونگ چاہتا ہے۔سیاسی جماعتوں میں جمہوریت مضبوط نہیں ہوگی تو پھر سیاست ،پارلیمنٹ پر آمریت ومصنوعی قیادت مسلط ہوگی۔جماعت اسلامی ملک میں قرآن وسنت کے نظام کے ذریعے ملک وقوم کی خدمت کرنا چاہتی ہے تاکہ ملک ترقی،لوگوں کو روزگار اور انسانوں کو امن وسکون میسر ہوسکے،سیدنا امام حسین ؓ کا مشن بھی یہی تھا۔

 
 
 
 
     ^واپس اوپر جائیں



سوشل میڈیا لنکس