Jamaat-e-Islami Pakistan | English |

اہم خبریں

اردو کو سرکاری ،دفتری،عدالتی ، تعلیمی اداروں اور مقابلے کے امتحانات کا ذریعہ بنایا جائے


لاہور8/ستمبر2019ء: نیشنل ایسوسی ایشن ایجوکیشن (نافع)  پاکستان وتنظیم اساتذہ پاکستان کے زیر اہتمام ایک سیمینار بعنوان’’اردو بطور قومی زبان۔اور نفاذ کی عملی راہیں ‘‘ اصلاح انٹر نیشنل انسٹی ٹیوٹ وحدت روڈ لاہور میں منعقد ہوا۔ جس کی صدارت جناب پروفیسر ڈاکٹر میاں محمد اکرم  صدر تنظیم نے کی ۔جس میں مہمان خصوصی محمد جمیل بھٹی (سابق اکاونٹنٹ جنرل پنجاب) ہدایت خان( ڈائریکٹر نافع پاکستان )تھے۔نظامت کے فرائض رضوان الحق نے انجام دیئے۔مقررین میں پروفیسر مہر محمد سعید اختر، پروفیسر ممتاز سالک، پروفیسر راؤ جلیل احمد، حامد انوار ،ڈاکٹر ریاض محبوب، پروفیسر جمیل چوہدری، محمد ابراہیم،خوشحال شاہین شامل تھے۔ قومی یکجہتی کے لیے قومی زبان کا نفاذ بہت ضروری ہے۔ دنیا کے تمام ترقی یافتہ ممالک  نے اپنی ہی زبان میں بچوں کو تعلیم دی جاتی ہے اور اپنی ہی زبان میں تحقیق وترویج کا کام کیا جاتا ہے۔ ہماری بدقسمتی ہے کہ ہم اپنی زبان کی موجودگی میں غیر کی زبان کو اپنے اوپر مسلط کیے ہوئے ہیں۔ ہم انگریزی زبان کے مخالف نہیں لیکن انگریزی کے بے جا تسلط کی ہر جگہ مخالفت کرتے ہیں ۔ نافع اور تنظیم اساتذہ پاکستان نفاذ اردو کے حوالے سے ملک بھر میں پروگرامات کا انعقاد کریں گے۔ پروگرام کے اختتام پر قرارداد پیش کی گئی۔

مقبوضہ کشمیر میں جاری کرفیو اور مسلمانوں کی منظم نسل کشی جیسے مظالم کی پرزور مذمت کرتے ہوئے حکومت پاکستان سے مطالبہ کرتے ہیں کہ عالمی سطح پر مہم چلا کر مودی سرکار کے انسانیت سوز مظالم کو بند کروایا جائے نیز اقوام متحدہ کے مجرمانہ تغافل کے خلاف آواز بلند کر کے مسئلہ کشمیر پر اس کی قرار دادوں پر عمل درآمد کرایا جائےاور کشمیر کے لوگوں کو حق خود ارادایت کے ذریعے اپنی مرضی کا موقع فراہم کیا جائے۔

نفاذ اردو کانفرنس کا یہ اجلاس حکومت پاکستان سے یہ مطالبہ کرتا ہے کہ بابائے قوم کے فرمان اور سپریم کورٹ آف پاکستان کے فیصلہ کی روشنی میں ہر شعبہ حیات میں ہر سطح پر قومی زبان کا عملی نفاذ عمل میں لایا جائے۔ اردو کو سرکاری ،دفتری،عدالتی ، تعلیمی اداروں اور مقابلے کے امتحانات کا ذریعہ بنایا جائے۔

Youtube Downloader id

 
 
 
 
     ^واپس اوپر جائیں



سوشل میڈیا لنکس