Jamaat-e-Islami Pakistan | English |

اہم خبریں

مقبوضہ وادی میں زندگی مفلوج ، موبائل،لینڈ لائن سروس معطل اور لوگ غذائی اجناس اور دواؤں سے محروم ہیں۔ محمد جاوید قصوری


لاہور3/ ستمبر2019ء: امیر جماعت اسلامی صوبہ وسطی پنجاب اور صدر ملی یکجہتی کونسل صوبہ وسطی پنجاب محمد جاوید قصوری نے گذشتہ روز منصورہ میں پروگرام سے خطاب کرتے ہوئے کہا ہے کہ مقبوضہ کشمیر کی صورتحال پریورپی پارلیمنٹ کی خارجہ امور کمیٹی کا اجلاس خوش آئند ہے۔ یورپی پارلیمنٹ کی جانب سے مقبوضہ کشمیر کی خصوصی حیثیت کی بحالی کے مطالبے کا خیر مقدم کرتے ہیں۔جب تک مسئلہ کشمیر کے حل کے لیے عالمی برادری بھارت پر دباؤ نہیں بڑھائے گی اس وقت تک خطے میں جنگ کے بادل منڈلاتے رہیں گے۔ وادی میں زندگی مفلوج، انٹرنیٹ، موبائل،لینڈ لائن سروس معطل، لوگ غذائی اجناس اور دواؤں سے محروم ہیں۔ بروقت اقدام نہ اٹھایا گیا اور بھارت کا کرفیو اس طرح جاری رہا تو بہت بڑا انسانی المیہ جنم لے سکتا ہے۔ انھوں نے کہا کہ حکومت پاکستان کو بیانا ت سے آگے بڑھ کر عملی اقدامات کرنے ہوں گے۔ بھارت اگر اپنے دعووں میں سچا ہے تو مقبوضہ کشمیر میں عالمی مبصرین اور میڈیا کو جانے کی اجازت کیوں نہیں دیتا؟۔ مودی نے تاریخی غلطی کرکے بھارت کی سلامتی کو خطرے میں ڈال دیا ہے۔ ہندوستان کے عوام بھی آر ایس ایس کے غنڈوں،انڈین میڈیا کی جھوٹی سنسنی خیز رپورٹوں اور جنگی جنون سے تنگ آگئے ہیں۔ مسئلہ کشمیر کا حل صرف جنوبی ایشیا ہی نہیں بلکہ پوری دنیا کے امن کی ضمانت ہے۔ ان کا مزید کہنا تھا کہ حکومت عوامی توقعات پر پورا اترنے میں ناکام رہی ہے۔ منافع بخش ادارے خسارے کا شکار ہیں۔ میڈیا کی رپورٹس کے مطابق سٹیل مل کا خسارہ 270ارب سے تجاوز کرچکا ہے۔ جبکہ واجب الادا قرض اور واجبات کو شامل کرلیا جائے تو یہ بڑھ کر 500ارب روپے ہوجائے گا۔ ایک طرف ریلوے کا خسارہ 32ارب 59کروڑ روپے، جبکہ دوسری طرف پی آئی اے کا خسارہ 50ارب روپے سے بڑھ چکا ہے۔ محمد جاوید قصوری نے کہا کہ کرپشن فری پاکستان جماعت اسلامی کی منزل ہے۔ ملک میں جب تک انصاف کا بول بالا نہیں ہوتا،ا س وقت تک بہتری نہیں آسکتی۔                      

 
 
 
 
     ^واپس اوپر جائیں



سوشل میڈیا لنکس