Jamaat-e-Islami Pakistan | English |

اسلامی فلاحی مملکت بنانے کے لئے نوجوانوں کو اپنا بھر پور کر دار ادا کرنا ہو گا۔جاوید قصوری


لاہور4/اگست2019ء: امیر جماعت اسلامی صوبہ وسطی پنجاب محمد جاوید قصوری نے کہا ہے کہ جے آئی یوتھ کے نوجوان ہماری قیمتی اثاثہ ہیں۔اس وقت پاکستان کی آبادی میں سے 60فیصد نوجوان ہیں۔جماعت کے سرکل میں نوجوانوں کو متحرک اور بیدار کرنے کے علاوہ معاشرے کے عام نوجوانوں کو بھی جماعت اسلامی یوتھ میں شامل کرنا چاہئے ۔اگر ہم پاکستان میں نوجوانوں کو تعمیری اور مثبت سرگرمیاں دیں گے تو اس کا فائدہ جماعت اسلامی کو ہو گا ۔اسلامی فلاحی مملکت بنانے کے لئے نوجوانوں کو اپنا بھر پور کر دار ادا کرنا ہو گا ۔بلدیاتی الیکشن کی تیاری بھی جماعت اسلامی نے ضلعی سطح پر شروع کر دی ہے ۔ان شاءاللہ جے آئی یوتھ کے تعاون سے پنجاب میں جماعت اسلامی بلدیاتی الیکشن میں بھر پور حصہ لے گی ۔ ملک میںبلدیاتی الیکشن کسی بھی وقت پر ہو سکتے ہیں۔ہمیں ان کے لئے تیاری کرنی ہو گئی ۔ ان خیالات کا اظہار انھوں نے گزشتہ روز منصورہ میں جے آئی یوتھ کی مرکزی کونسل کے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ انھوں نے کہا کہ مقبوضہ کشمیر میں ہندوستان کی جارحیت بے نقاب ہوچکی ہے۔ سویلین آبادی کو کلسٹر بم سے نشانہ بنانا عالمی قوانین کی خلاف ورزی ہے۔ بھارت نہتے کشمیریوں پر مسلسل مظالم کے پہاڑ ڈھارہا ہے، جس کی جتنی بھی مذمت کی جائے کم ہے۔ عالمی عدالت انصاف میں کل بھوشن یادیو کے خلاف فیصلے کے بعد بھارت بوکھلاہٹ کا شکار ہے۔ انھوں نے کہاکہ مقبوضہ کشمیر میں مزید 28ہزار فوجیوں کی تعیناتی نے ثابت کردیا ہے کہ بھارت کشمیریوں کے جذبہ حریت کو دبانے میں بری طرح ناکام رہا ہے۔ نوجوان ملک کا قیمتی سرمایہ اور یہ ہندوستان سے کشمیر کی آزادی کے لیے ہراول دستہ ہیں۔ حکومت پاکستان کو مسئلہ کشمیر پر اپنابھر پور کردار ادا کرنا چاہیے۔ بھارت ایک سوچی سمجھی سازش کے تحت مسلم اکثریت کو اقلیت میں بدلنے کی کوشش کررہا ہے۔ پاکستان کے غیور اور کشمیر کے بہادر عوام ہندوستان کی کسی چال کو کامیاب نہیں ہونے دیں گے۔ انھوں نے کہا کہ کنٹرول لائن پر نہتے پاکستانی شہریوں پر گولہ باری نے ثابت کردیاہے کہ بھارت ایک دہشت گرد ریاست کا روپ دھار چکا ہے۔ اب وقت آگیا ہے کہ بھارتی حکمرانوں کوان کی زبان میں جواب دیا جائے۔ ہندوستان کو ایٹمی اسلامی ملک کا وجود برداشت نہیں ہورہا ۔ جب بھی مذاکرات کی بات کی گئی ، بھارت نے اوچھے ہتھکنڈے اور ریاستی دہشت گردی کے ذریعے ان کو سبوتاژ کیا ہے۔ محمد جاوید قصوری نے مزید کہا کہ پاکستان کے عوام کا مطالبہ ہے کہ حکومت بھارتی جاسوس کل بھوشن یادیو کو او آئی سی کا ہنگامی اجلاس بلا کر فی الفور پھانسی دے۔ مسئلہ کشمیر کے حوالے سے عالمی برادری کی توجہ مبذول کروائی جائے۔ انڈیا اپنی تمام حدود کو پار کرچکا ہے۔ جب تک کشمیر مکمل طور پر بھارت کے غاصبانہ قبضے سے آزادنہیں ہوجاتا ، اس وقت تک پاکستان کے عوام اپنے بھائیوں کی اخلاقی ، سفارتی اور سیاسی حمایت جاری رکھیں گے۔ مسئلہ کشمیر کے حل کے لیے امریکی ثالثی کی پیشکش کافی نہیں۔ ضرورت اس امر کی ہے کہ وہ بھارت پر دباﺅ ڈالے اور کشمیریوں کو حق خود ارادیت دیا جائے۔

 
 
 
 
     ^واپس اوپر جائیں



سوشل میڈیا لنکس