Jamaat-e-Islami Pakistan | English |

حکومت اسکولوں میں اساتذہ اور بنیادی سہولیات کی فراہمی کےلئے اقدامات کرے۔کاشف شیخ


کراچی 04 اگست 2019 جماعت اسلامی سندھ کے جنرل سیکریٹری کاشف سعید شیخ نے سندھ کابینہ کے اجلاس میںوزیرتعلیم کی جانب سے صوبہ میں 38 ہزار اسکولوں میں بنیادی سہولیات کے فقدان اور 12 ہزار اسکولوں میں اساتذہ نہ ہونے کے اعتراف پر تشویش کا اظہار اور سندھ میں تعلیمی ایمرجنسی کے دعویدار حکمرانوں کے منہ پر تمانچہ قرار دیا ہے۔ انہوں نے آج ایک بیان میں کہاکہ حکومت تعلیمی معیار کو بہتر بنانے کےلئے قابل اساتذہ کا تقرر، اساتذہ کی تربیت اور اسلام و نظریہ پاکستان کے ہم آہنگ تعلیمی نصاب کےلئے کرپشن فری و سنجیدہ اقدامات کرے۔ صوبہ کے دیگر شعبوں کی طرح تعلیم کا نظام بھی تشویش ناک و توجہ طلب ہے۔ سب سے زیادہ کرپشن و بد انتظامی صورتحال کا شکار بھی یہی شعبہ ہے۔ صوبائی وزیر تعلیم کا زمینی حقائق کے مطابق صورتحال کا اعتراف اور اصلاح کے عزائم خوش آئند بات ہے تاہم اس کو صرف اعلانات تک محدود نہیں بلکہ عملی جامہ پہنا کر نسل نو کا مستقبل محفوظ بنایا جائے۔ اس وقت بھی کئی لاکھ بچے تعلیم کے زیور سے محروم ہیں۔ جماعت اسلامی کے رہنما نے مطالبہ کیا کہ صوبائی حکومت نہ صرف تعلیم کے فروغ بلکہ اسکولوں میں اساتذہ اور بنیادی سہولیات کی فراہمی کےلئے اقدامات کرے۔ اسکولوں کو ملنے والے ایس ایم سی فنڈز کے درست استعمال اور چیک اینڈ بیلنس کو بھی یقینی بنایا جائے۔

 
 
 
 
     ^واپس اوپر جائیں



سوشل میڈیا لنکس