Jamaat-e-Islami Pakistan | English |

نااہل اور بے حس حکومتی نظام امریکی سہارے اور ریاستی اداروں کی چھتری تلے زیادہ دیر نہیں چل سکے گا ۔لیاقت بلوچ


لاہور30جولائی 2019ء:نائب امیر جماعت اسلامی اور مرکزی مجلس قائمہ سیاسی، انتخابی پارلیمانی امور کے صدر لیاقت بلوچ نے منصورہ میں ٹاسک فورس اور کور کمیٹی اجلاس سے خطا ب اور کسانوں کے وفد سے گفتگو کرتے ہوئے کہاہے کہ عوام ماضی میں فوجی آمریتوں ، بھٹو خاندان ،شریف خاندان ، مفادات اور سیاسی بے وفاﺅں کی سیاست سے مایوس اور تلخ تجربات رکھتے ہیں ۔ عوام خصوصاً نوجوانوں کی توقعات تھیں کہ عمران خان آئے گا اور حالات بدلیں گے لیکن یہ المیہ اور بہت ہی تلخ حقیقت ہے کہ حکومت نے تمام طبقات کو مایوس کیا ۔ امریکی سہارا اور ریاستی اداروں کی چھتری تلے نااہل اور بے حس حکومتی نظام زیادہ دیر نہیں چل سکے گا ۔ مہنگائی ، بے روزگاری ، افراط زر اور پیداواری لاگت مسلسل بڑھتی جارہی ہے ۔ سود اور قرضوں کے بے تحاشا اضافہ نے معیشت کا پہیہ جام کردیا ہے ۔ ملک کو از سر نو اہل ، بااعتماد، مہذب ، شائستہ اور سنجیدہ قیادت اورٹیم کی ضرورت ہے ۔ انہوں نے کہاکہ آئی ایم ایف کی ہدایت پر بنایا گیا قومی بجٹ زراعت کے لیے تباہی لا رہاہے ۔ بجٹ میں زرعی سفارشات قابل قبول نہیں ۔ زرعی صنعت سوچے سمجھے منصوبہ کے تحت تباہ کی جارہی ہے ۔ دس کروڑ انسان زراعت سے محروم اور غربت کی طرف دھکیلے جا رہے ہیں ۔ زراعت ، کسانوں اورہاریوں کو ریلیف دے کر ہی قومی معیشت کو سہارا مل سکتاہے ۔ 

لیاقت بلوچ نے کہاکہ جماعت اسلامی نے دینی ، سیاسی اور سماجی محاذ پر امانت ، دیانت اور خدمت سے اپنے لیے باوقار اور عزت کا مقام حاصل کیاہے ۔ قیادت اور کارکنان نے نظام کو قرآن و سنت کے تابع لانے کے لیے مسلسل انتھک کوششیں کی ہیں ۔ پاکستان کے لیے آزاد جمہوری نظام اور غیر جانبدارانہ انتخاب ناگزیر ہیں ۔ طلبہ ، نوجوانوں ، خواتین ، کسانوں ، مزدوروں میں مولانا سید ابوالاعلیٰ مودودی ؒ کی فکر کے گہرے اثرات ہیں ۔ سب کو متحد ہو کر بابرکت اسلامی نظام کے لیے جدوجہد کرنا ہوگی۔

 
 
 
 
     ^واپس اوپر جائیں



سوشل میڈیا لنکس