Jamaat-e-Islami Pakistan | English |

ایک سال میں حکمرانوں نے عوام پر عرصہ حیات تنگ اور مہنگائی میں بے پناہ اضافہ کردیا ہے۔جاوید قصوری


لاہور25/جولائی 2019ء: امیر جماعت اسلامی صوبہ وسطی پنجاب محمد جاوید قصوری نے کہا ہے کہ وزیر اعظم عمران خان کا دورہ امریکہ غلامی کے نئے معاہدے اور امداد کی بحالی کے سوا کچھ نہیں۔ امریکن حکام سے ملاقاتوں میں تعریفوں کے پل باندھنے اور ماضی کے حکمرانوں کو برا بھلا کہنے کے باوجود سردمہری کا مظاہرہ اس بات کا ثبوت ہے کہ برابری کی سطح پر دو طرفہ تعلقات کی باتیں محض بیانات اور خام خیالی ہیں اور ان کا حقیقت سے دور دور تک کوئی تعلق نہیں۔ ان خیالات کا اظہارانھوں نے گزشتہ روز صوبائی دفتر منصورہ میں مختلف عوامی وفود سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔ انھوں نے کہا کہ جو امریکہ افغانستان میں شکست کھا چکا ہے وہ افغانستان کو صفحہ ہستی سے مٹانے کی باتیں کررہا ہے۔ ایک طرف امریکہ دوحہ میں طالبان سے مذاکرات کرکے افغانستان سے نکلنے کے راستے ڈھونڈ رہا ہے تو دوسری طرف دھمکیوں کا سلسلہ بھی جاری ہے۔وزیر اعظم کو اپنے دورہ امریکہ کے حوالے سے پارلیمنٹ کو اعتماد میں لینا چاہے ۔تاریخ گواہ ہے کہ امریکہ نے ہمیشہ اپنے مفادات کی بات کی ہے ۔ انھوں نے کہا کہ پی ٹی آئی کی حکومت کو ایک سال مکمل ہوچکا ہے مگر بدقسمتی سے لوگوں کی توقعات پوری نہیں ہوئیں۔ تبدیلی کا نعرہ لگانے والوں نے پوری قوم کو ٹرک کی بتی کے پیچھے لگادیا ہے۔ صرف ایک سال میں ملکی قرضوں میں 3653 ارب روپے سے زائد کا اضافہ ہوگیا ہے ۔ مہنگائی، بے روزگاری اور لاقانونیت کی شرح آسمان سے باتیں کررہی ہے۔ عوام کو کسی قسم کا کوئی ریلیف نہیں۔ جوشخص کشکول توڑنے کی باتیں کیا کرتا تھا آج وہی کشکول اٹھا کر دنیا کے چکرلگارہا ہے۔ محمد جاوید قصوری نے مزیدکہا کہ حکومت کی جانب سے میڈیا کورٹس بنانے کی باتیں تشویشناک اور آزادی صحافت پر قدغن لگانے کے مترادف ہیں۔ پریس کونسل اور پیمرا کی موجودگی میں میڈیا کورٹس کا حکومتی اعلان گھبراہیٹ اور بوکھلاہٹ کا نتیجہ ہے۔ میڈیا کا کام حکمرانوں کو آئنہ دکھانا ہے ۔اس کی آزادی کو سلب کرنے کی کسی کو اجازت نہیں دی جاسکتی۔ 

 
 
 
 
     ^واپس اوپر جائیں



سوشل میڈیا لنکس