Jamaat-e-Islami Pakistan | English |

اہم خبریں

منشیات فروش سکولوں و کالجوں میں بچوں کو منشیات کا عادی بنارہے ہیں جبکہ حکومت سو رہی ہے۔


فیصل آباد  20/جولائی 2019ء:اسلامی جمعیت طلبہ کے ناظم ڈویژن حسن بلال ہاشمی،جنرل سیکرٹری برادرحسیب خالد نے اپنے مشترکہ بیان میں کہا ہے کہ تعلیمی اداروں میں منشیات کا بڑھتا استعمال روکا جائے۔ موجودہ حکومت نے دعویٰ کیاتھاکہ ہم ہر ضلع میں کھیلوں کے میدان بنائیں گے مگر منشیات فروش سکولوں و کالجوں میں بچوں کو منشیات کا عادی بنارہے ہیں جبکہ حکومت سو رہی ہے۔ اسلامی جمعیت طلبہ کے رہنمائوںنے کہا کہ نااہل حکمرانوں نے ملک و قوم کو ایسی دلدل میں پھنسا دیا ہے جس سے نکلنے کا واحد راستہ اللہ سے اجتماعی توبہ و استغفار اور اسلامی تعلیمات کا فروغ ہے۔ ایک طرف مدینہ کی اسلامی ریاست کی بات ہورہی ہے تو دوسری طرف حکومت خود ایسا ماحول تیار کر رہی ہے جو اسلامی ریاست کی ضد ہے۔حسن بلال ہاشمی نے کہاکہ حکومتی وزیر خود اعتراف کرتے ہیں کہ ملک کے 67 لاکھ نوجوان نشے میں مبتلاہیں جن میں اعلیٰ تعلیمی اداروں کے طلبہ وطالبات کی بڑی تعداد شامل ہے۔ معیشت کی تباہی، غربت، افلاس اور مہنگائی میں اضافہ سے پوری قوم پریشان ہے۔ حکومت نے ایک کروڑ نوجوانوں کو روزگار دینے کی بات کی تھی مگر ہر ماہ پچاس ہزار لوگ بے روزگار ہورہے ہیں اور حکومت کے پہلے دس ماہ میں پانچ لاکھ لوگ روزگار سے محروم ہوئے ہیں۔

 
 
 
 
     ^واپس اوپر جائیں



سوشل میڈیا لنکس