Jamaat-e-Islami Pakistan | English |

اہم خبریں

ریفارمز کی بات کرنے والوں نے بجٹ میں مدارس کا کوٹہ مختص نہیں کیا۔منتظم اعلیٰ جمعیت طلبہ عربیہ


لاہور18جولائی 2019ء:منتظم اعلیٰ جمعیت طلبہ عربیہ پاکستان محمد الطاف نے کہا ہے کہ موجودہ حکومت کے وزیر اعظم عمران خان نے 2018 کے عام انتخابات سے پہلے مدارس ریفا ر مز کے حوالے سے جو بلند و بانگ دعوے کیے تھے وہ سب جھوٹے نکلے اس وقت کنٹینرز پر اور اپنے جلسوں میں کہا کرتے تھے کہ مدارس ریفارمز کریں گے لیکن 11 مہینے گزرنے کے باوجود انہوں نے مدارس کے حوالے سے کوئی بھی اہم اقدام نہیں اٹھایا بلکہ جو بجٹ ان کی حکومت نے پیش کیا اس میں مدارس کے لئے کسی قسم کا کوئی بھی پیکج نہیں رکھا گیا ہمیشہ کی طرح مدارس کو نظر انداز کیا، انہوں نے کہا کہ جمعیت طلبہ عربیہ حکومت کا یہ بجٹ مسترد کرتی ہے جس میں مدارس کے لئے کسی بھی قسم کا کوئی کوٹہ مختص نہیں کیا گیا،ان خیالات کا اظہار انہوں نے مرکز جمعیت طلبہ عربیہ پاکستان میں میڈیا کے نمائندوں سے گفتگو کرتے  ہوئے کیا اس موقع پر ان کے ہمراہ ناظم نشرواشاعت جمعیت طلبہ عربیہ پاکستان عتیق الرحمن سمیت دیگر ذمہ داران موجود تھے انہوں نے کہا کہ فتنوں کے اس دور میں دینی مدارس اللہ تعالیٰ کی بہت بڑی نعمت اور اسلام کی حفاظت و اشاعت کا بہترین ذریعہ ہیں ہمیں ان مدارس کی قدر کرنی چاہیے جہاں قرآن و حدیث پڑھے اور پڑھائے جاتے ہیں وہاں اللہ تعالیٰ کی رحمت اور نور کی بارش ہوتی ہے،انہوں نے کہا کہ ہمارے بچوں کے ایمان کی حفاظت اور تعلیم و تربیت میں ان دینی مدارس کا بنیادی کردار ہے یہ دینی مدارس ہدایت کے سرچشمے اور اسلام کے قلعے ہیں جن کا فیض قیامت تک جاری رہے گا، فتنوں سے بچنے کے لیے اللہ والوں کی صحبت کو اختیار کرنا ہوگی۔

 
 
 
 
     ^واپس اوپر جائیں



سوشل میڈیا لنکس