Jamaat-e-Islami Pakistan | English |

تحریک انصاف کی عوام دشمن پالیسیوں کی وجہ سے لاکھوں لوگ بے روزگار ہو چکے ہیں


لاہور 10جولائی 2019ء:امیر جماعت اسلامی صوبہ وسطی پنجاب محمد جاوید قصوری نے کہا ہے کہ جس کسی نے قومی خزانے کو نقصان پہنچایا ہے ،اس سے جوابدہی اور محاسبہ ہونا چاہیے۔ماضی کے حکمرانوں نے اپنے بیرونی دوروں پر سوا تین ارب روپے خرچ کیے جبکہ موجودہ حکمران بھی ان کے نقش قدم پر چل رہے ہیں۔ ایسی قوم جس کا بچہ بچہ قرضوں کی زنجیر میں جکڑا ہوا ہے، اس کے حکمرانوں کی شاہ خرچیاں افسوسناک ہیں۔ ان خیالات کا اظہار انھوں نے گزشتہ روزلاہور میں مختلف پروگرامات سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ انھوں نے کہا کہ کفایت شعار ی کے دعویداروں نے عوامی جذبات کو بری طرح مجروح کیا ہے۔ تحریک انصاف کو ووٹ دے کر کامیاب کرانے والے بھی حیران و پریشان ہیں۔ صنعتیں بند اور معاشی ترقی مخدوش ہو گئی ہے۔انھوں نے کہاکہ آئی ایم ایف کی رپورٹ کے مطابق آئندہ چار برسوں میں پاکستان کا قرضہ 95.4ارب ڈالر سے بڑھ کر 130ارب ڈالر تک پہنچ جائے گا، جوکہ موجودہ حکمرانوں کے ناکام ترین معاشی وژن کا نتیجہ ہے۔ بد قسمتی سے تاریخ کے نااہل ترین حکمران ملک و قوم پر مسلط ہوچکے ہیں۔ انھوں نے کہا کہ زیروریٹنگ سے ہندوستان کی کاٹن امپورٹ 14ہزار ٹن سے بڑھ چکی ہے جبکہ پاکستان کی ٹیکسٹائل انڈسٹری ہوشر با ٹیکسوںکے اضافے کی وجہ سے تباہی کے دہانے پر ہے۔تحریک انصاف کی عوام دشمن پالیسیوں کی وجہ سے لاکھوںمزدور بے روزگار چکے ہیں۔ ایک کروڑ افراد کو نوکریاں دینے والوں نے محنت کشوں سے روزگارتک چھین لیا ہے۔ محمد جاوید قصوری نے مزید کہا کہ حکمرانوں کے قول و فعل میں بڑا تضاد ہے۔ ایک طرف وفاقی وزیر حماد اظہر اس بات کا دعویٰ کررہے ہیں کہ ٹیکسز کا حجم 516ارب روپے ہے جبکہ دوسری طرف آئی ایم ایف نے واضح کیا ہے کہ 733ارب 50کروڑ روپے کے ٹیکس لگائے گئے ہیںجبکہ قوم کو صرف 516ارب بتائے جارہے ہیں۔ حکمران مسلسل غلط بیانی اور جھوٹے وعدے کرکے عوام کو دھوکہ دے رہے ہیں۔ 

 
 
 
 
     ^واپس اوپر جائیں



سوشل میڈیا لنکس