Jamaat-e-Islami Pakistan | English |

اہم خبریں

نااہل حکمرانوں نے ملک و قوم کودلدل میں پھنسا دیا ، نکلنے کا واحد راستہ اللہ سے اجتماعی توبہ و استغفار اور اسلامی تعلیمات کا فروغ ہے ۔ سینیٹر سراج الحق


 

لاہور6جولائی2019 ء:امیر جماعت اسلامی پاکستان سینیٹر سراج الحق نے کہاہے کہ تعلیمی اداروں میں منشیات کا بڑھتا استعمال روکا جائے ۔ عمران خان نے کہاتھاکہ ہم ہر ضلع میں کھیلوں کے میدان بنائیں گے مگر منشیات فروش سکولوں و کالجوں میں بچوں کو منشیات کا عادی بنارہے ہیں جبکہ حکومت سو رہی ہے ۔ منصورہ میں کارکنوں سے گفتگو کرتے ہوئے سینیٹر سراج الحق نے کہاکہ نااہل حکمرانوں نے ملک و قوم کو ایسی دلدل میں پھنسا دیا ہے جس سے نکلنے کا واحد راستہ اللہ سے اجتماعی توبہ و استغفار اور اسلامی تعلیمات کا فروغ ہے ۔ ایک طرف مدینہ کی اسلامی ریاست کی بات ہورہی ہے تو دوسری طرف حکومت خود ایسا ماحول تیار کر رہی ہے جو اسلامی ریاست کی ضد ہے ۔

سینیٹر سراج الحق نے کہاکہ حکومتی وزیر خود اعتراف کرتے ہیں کہ ملک کے 67 لاکھ نوجوان نشے میں مبتلاہیں جن میں اعلیٰ تعلیمی اداروں کے طلبہ وطالبات کی بڑی تعداد شامل ہے ۔ معیشت کی تباہی ، غربت ، افلاس اور مہنگائی میں اضافہ سے پوری قوم پریشان ہے ۔ حکومت نے ایک کروڑ نوجوانوں کو روزگار دینے کی بات کی تھی مگر ہر ماہ پچاس ہزار لوگ بے روزگار ہورہے ہیں اور حکومت کے پہلے دس ماہ میں پانچ لاکھ لوگ روزگار سے محروم ہوئے ہیں ۔ انہوںنے کہاکہ حکومت نے پچاس لاکھ لوگوں کو گھر دینے کا وعدہ کیا تھا جبکہ اب تک حکومت نے کچھ نہیں نہیں کیا۔ بجٹ میں حکومت نے مزدور کی ماہانہ تنخواہ 17500 مقرر کی ہے لیکن حکومت کا کوئی معاشی جادوگر اس تنخواہ میں گھر کا بجٹ بنا کر دینے کو تیار نہیں ۔ 

سینیٹر سراج الحق نے کہاکہ ملک کے تمام مسائل اور پریشانیوں کا حل اسلامی نظام کے نفاذ میں ہے ۔ جب تک سیاسی معاشی اور عدالتی نظام کو قرآن وسنت کے مطابق نہیں بنایا جاتا ، مشکلات کم نہیں ہوں گی ۔انہوں نے کہاکہ پاکستان زرعی ملک ہے مگر ہمارا کسان بھوکا سوتاہے ۔ اللہ تعالیٰ نے پاکستا ن کو بے پناہ قدرتی وسائل سے مالا مال کیاہے مگر ہمارے ہاتھوں میں آئی ایم ایف کی ہتھکڑیاں ہیں ۔ ہماری 90 فیصد آبادی صاف پانی سے محروم ہے ۔ انہوں نے کہاکہ روٹی کپڑا مکان اور دلوں کا اطمینان صرف اللہ کا نظام دے سکتاہے ۔ 

 

 
 
 
 
     ^واپس اوپر جائیں



سوشل میڈیا لنکس