Jamaat-e-Islami Pakistan | English |

عدم برداشت اور گالی گلوچ کی سیاست عوام کی ضرورت نہیں ،سیاست بند گلی کی طرف جارہی ہے ۔ سینیٹر سراج الحق


لاہور 4 جولائی2019 ء:امیر جماعت اسلامی پاکستان سینیٹر سراج الحق نے کہاہے کہ سیاست بند گلی کی طرف جارہی ہے ۔ عدم برداشت اور گالی گلوچ کی سیاست عوام کی ضرورت نہیں ۔ عوام مہنگائی اور بے روزگاری سے نجات چاہتے ہیں لیکن حکومت کے پاس معاشی مسائل کا حل نہیں اس لیے وہ شور مچا کر عوام کی توجہ نان ایشوز کی طرف پھیرنے کی ناکام کوشش کر رہی ہے ۔ حکومت کی ایک سالہ کارکردگی کا نچوڑ مہنگائی ، بے روزگاری اور آئی ایم ایف کی تابعداری کے سوا کچھ نہیں ۔ جماعت اسلامی سابقہ اورموجودہ کرپٹ عناصر کا محاسبہ چاہتی ہے ۔ جب تک لوٹی دولت واپس نہیں آتی ، عوام کو ریلیف نہیں ملے گا ۔ ان خیالات کااظہار انہوںنے منصورہ میں مرکزی مجلس عاملہ کے اجلاس سے خطاب اور کارکنوں سے گفتگو کرتے ہوئے کیا ۔اس موقع پر سیکرٹری جنرل جماعت اسلامی امیرالعظیم بھی موجود تھے ۔ 

سینیٹر سراج الحق نے کہاکہ حکومت کمزور وکٹ پر کھیل رہی ہے ۔ سنسر شپ اور میڈیا پر پابندی ناقابل قبول ہے ۔ ماضی کی طرح اب بھی گھوڑوں کی خرید و فروخت جاری ہے جبکہ کابینہ میں پہلے ہی سابقہ حکمران جماعتوں کے وزیر مشیر اور مشرف کی ٹیم براجمان ہے ۔انہوں نے کہاکہ جماعت اسلامی افراد اور خاندانوں کی بادشاہت کے بجائے قانون اور آئین کی حکمرانی چاہتی ہے ۔ انہوںنے کہاکہ ایمنسٹی اسکیم بھی پلی بارگیننگ کی ایک قسم ہے جو کامیاب نہیں ہوئی ۔ المیہ ہے کہ حکمران لوٹ مار ، منی لانڈرنگ ، ذخیرہ اندوزی اور چور بازاری جیسے جرائم کو روکنے کی بجائے ناجائز ذرائع سے دولت جمع کرنے والوں کا کالا دھن سفید کرنے میں لگی ہوئی ہے ۔ اگر حکومت ان جرائم میں ملوث لوگوں کو پکڑ کر قانون کے حوالے کرتی اور لوٹ کھسوٹ کی دولت بحق سرکار ضبط کرتی تو کہیں بہتر نتائج حاصل کر سکتی تھی ۔ انہوںنے کہاکہ ایک طرف حکومت سابقہ قرضوں کا رونا روتی ہے اور دوسری طرف خود دھڑا دھڑ قرضے لے رہی ہے ۔

 
 
 
 
     ^واپس اوپر جائیں



سوشل میڈیا لنکس