Jamaat-e-Islami Pakistan | English |

اہم خبریں

قرار داد برائے افغانستان



افغانستان جغرافیائی اور تاریخی حوالے سے ایشیاء بھر میں بے پناہ اہمیت کا حامل ملک ہے ۔ماضی میں یہ ملک روس اور برطانوی ہند کا ایک بفر اسٹیٹ تھا اور آج یہ جنوبی اور وسطی ایشیاء کے پل کا کردار ادا کر رہا ہے ۔

گزشتہ ایک صدی میں افغانوں نے دو استعماری طاقتوں برطانیہ اور روس کو شکست فاش دی اورا ب حالات بتا رہے ہیں کہ افغانستان میں امریکی شکست نوشتہ دیوار بن چکی ہے ۔جماعت اسلامی پاکستان نے افغانستان میں سویت یونین کی شکست اور فوجوں کے انخلاء تک اور بعد امریکی مداخلت کو بھی افغانستان میں قبول نہیں کیا۔

جماعت اسلامی پاکستان کی مرکزی مجلس شوریٰ افغانستان میں امریکہ اور اس کے اتحادیوں کے خلاف مردانہ وار جدوجہد کو انتہائی قدر کی نگاہ سے دیکھتی رہی ہے اور اس سلسلے میں جہد مسلسل و پے درپے کامیابیوں کا ذریعہ بنی ہے ۔

غیور اور بہادر افغانوں نے طالبان کی قیادت میں اللہ پر بھروسہ کرتے ہوئے قربانیوں کی لازوال داستان مرتب کرتے ہوئے دنیا کی سپر طاقت امریکہ اوراس کے اتحادیوں کے گھٹنے ٹیکنے پر مجبور کیا ہے ۔آج اس حقیقت کو دنیا تسلیم کرنے پر مجبورہے کہ طالبان افغانستان کی ایک غالب مؤثر قوت بن چکی ہے ۔

جماعت اسلامی پاکستان کی مرکزی مجلس شوریٰ اس موقع پر امریکہ اور طالبان کے مذاکرات کی پیش رفت کو خوش آئند سمجھتی ہے اور اقوام عالم سے یہ مطالبہ کرتی ہے کہ اس کوشش کے نتیجے میں مکمل آزاد،پرامن اور مستحکم افغانستان کے قیام کو یقینی بنایا جائے ۔

حکومت پاکستان کو بھی اپنے برادر اسلامی افغانستان کے لئے اپنا مثبت و بھر پور کردار ادا کرنا انتہائی ناگزیر ہے ۔یہاں پر اس خطرے کو ضرور پیش نظر رکھنا چاہئے کہ پاکستان کے دشمن بالخصوص ہندوستان اپنے مذموم مقاصد کے لئے افغانستان میں سرگرم عمل ہے ۔اسی طرح پاکستان کی سرحدوں کے قریب داعش کی حالیہ نقل و حرکت بھی قابل تشویش ہے۔جہاں ایک طرف امریکی افواج براہ راست معصوم شہریوں پر امن مردوں ،خواتین اور بچوں کو نشانہ بنا رہی ہیں۔ ان کی آلہ کار داعش بھی جنگ اور تشدد کی خوفناک آگ بھڑکارہی ہے۔ جس کا نوٹس لینا حکومت پاکستان کی اولین ذمہ داری بنتی ہے ۔

یہ اجلاس افغانستان کے سارے عوام اور تمام گروہوں سے بھی پرزور مطالبہ کرتا ہے کہ اپنے تنازعات اور اختلافات اور اندرونی لڑائیوں کی بجائے پرامن مذاکرات کے ذریعے انٹرا افغان ڈائیلاگ کو اپنے منطقی مثبت انجام تک پہنچایاجائے ۔

جماعت اسلامی پاکستان افغان حکومت سے بھی یہ امید اور توقع رکھتی ہے کہ امریکہ اور طالبان کے اس فیصلہ کن مذاکرات کے مرحلے پر اپنا بھر پو رمثبت کردار شامل کر کے افغانستان کو استعماری قوتوں کے چنگل سے دائمی آزادی کا ذریعہ بننے کا تاریخی موقع ضائع نہ ہونے دے۔

جماعت اسلامی پاکستان کی مرکز مجلس شوریٰ یہ سمجھتی ہے کہ پاکستان اور افغانستان کا مستقبل اور مفادات ایک ہیں جبکہ ہندوستان کی حکومت اپنے مذموم اور گھناؤنے عزائم کے لئے افغانستان کی سرزمین کو استعمال کرتی رہے ہے جبکہ حقیقت یہ ہے کہ پاکستان اور افغانستان کا استحکام اور ترقی نہ صرف علاقے کے امن وسلامتی کے لئے ضروری ہے بلکہ خود پاکستان کا بہترین مفاد اس سے وابستہ ہے ۔اس لئے افغانستان کی مکمل تعمیر و ترقی تک ملت پاکستان ان شاء اللہ اس کی پشتبان رہے گی ۔انٹرا افغان ڈائیلاگ، افغان معاشرہ اور ریاست کی تعمیر میں پاکستان افغان ملت کے ساتھ ہے ۔

جماعت اسلامی پاکستان کی مرکزی مجلس شوریٰ مستقبل کے پرامن ،خوشحال اور مستحکم افغانستان کو اپنی دعاؤں اور نیک خواہشات و تمناؤں کے ساتھ وابستہ سمجھتی ہے ۔

 

 
 
 
 
     ^واپس اوپر جائیں



سوشل میڈیا لنکس