Jamaat-e-Islami Pakistan | English |

ملک کو عالمی مالیاتی اداروں اور امریکہ کے سامنے معاشی اعتبار سے سرنڈرکردیا گیا ۔افطار ڈنر میں جماعت اسلامی کا موقف


لاہور19مئی 2019ء:پاکستان پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری اور شریک چیئرمین آصف علی زرداری کی دعوت افطار میں جماعت اسلامی کے نائب امیر اور سیاسی کمیٹی کے سربراہ لیاقت بلوچ اور سابق رکن قومی اسمبلی و نائب امیر جماعت اسلامی میاں محمد اسلم نے نمائندگی کی ۔افطار ڈنر میں شریک جماعتوں کے سربراہوں اور نمائندگان کی تبادلہ خیال نشست میں لیاقت بلوچ نے کہا کہ اپوزیشن جماعتوں کی ہر پارٹی کا میدان سیاست میں جدوجہد کا اپنا طریقہ کار ہے ۔1970کے بعد سے ہم نے سب تحریکوں اور تمام حکومتوں کے مقابلہ میں جدوجہد کی ہے ۔ماضی میں اقتدار میں رہنے والی جماعتیں غلطیاں نہ کرتیں تو آج ملک و ملت کو ان بدترین حالات کا سامنا نہ کرنا پڑتا۔پاکستان کی سیاسی جمہوری قوتوں کوآئین ،پارلیمانی نظام،تمام صوبوں کو منصفانہ معاشی اور انتظامی حقوق دینے پر اتفاق کرنا چاہئے ۔
لیاقت بلوچ نے کہا کہ عمران خان حکومت نے توقع سے زیادہ کم وقت میں اپنے آپ کو ایکسپوز کردیا ہے ۔ملک عالمی مالیاتی اداروں اور امریکہ کے سامنے معاشی اعتبار سے سرنڈرکردیا ہے ۔یہ سرنڈر فوجی آمر پرویز مشرف سے بھی بدتر ہے ۔حکومت نااہلوں ،ناکارہ اور پھٹیچروں کا بکھرا گروہ ہے جس سے کسی خیر کی توقع نہیں رکھی جاسکتی ۔ماضی کی تمام غلطیوں کا ازالہ کرتے ہوئے اپوزیشن جماعتیں واضح لائحہ عمل اور روڈ میپ دیں تو پھر ہی کوئی رائے دی جاسکتی ہے ۔انہوں نے کہا کہ جماعت اسلامی عید کے بعد مہنگائی بے روز گاری اور آئی ایم ایف کی غلامی کے خلاف عوامی مارچ کا آغاز کرے گی۔یہ بہتر ہوگا کہ قومی ترجیحات کے واضح لائحہ عمل کے ساتھ پہلے قوم کو اعتماد دیا جائے ۔
 

 
 
 
 
     ^واپس اوپر جائیں



سوشل میڈیا لنکس