Jamaat-e-Islami Pakistan | English |

اہم خبریں

    Error writing file '/tmp/MYgtKs2I' (Errcode: 28 "No space left on device")
  • No News

کرپشن کے مقدمات کو منطقی انجام تک پہنچایاجائے ،چیئرمین نیب کے بیان کاخیر مقدم کرتے ہیں۔امیرالعظیم


 لاہور17 اپریل 2019ء:امیرجماعت اسلامی صوبہ وسطی پنجاب امیر العظیم نے کہا ہے کہ کرپشن کے مقدمات کو منطقی انجام تک پہنچانے کے حوالے سے چیئرمین نیب کے بیان کا خیر مقدم کرتے ہیں۔ جن لوگوں کے خلاف کرپشن کے ٹھوس ثبوت موجود ہیں ان کے خلاف کارروائی بلا تفریق ہونی چاہئے۔ احتساب کا سارا عمل غیر متنازعہ ہونا چاہئے۔ بیوروکریسی کسی بھی ملک کی ریڑھ کی ہڈی کی حیثیت رکھتی ہے، اگر یہ مخلص ہو کر اور ایمانداری سے کام کرے تو ملک و قوم دن دگنی رات چوگنی ترقی کرسکتے ہیں۔ ان خیالات کا اظہار انھوں نے گزشتہ روز لاہور میں مختلف تقریبات سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ انھوں نے کہا کہ ہر گزرتے دن کے ساتھ کرپشن کے بڑے بڑے سکینڈلز سامنے آرہے ہیں۔ ملک میں روزانہ 12 ارب روپے کی کرپشن ہورہی ہے ،اگر اس کو روکنے کے لیے سنجیدگی سے عملی اقدامات کیے جائیں تو نہ صرف ہمیں قرضوں سے نجات مل سکتی ہے بلکہ عوام کو درپیش آدھے مسائل خود بخود حل ہوجائیں گے۔ انھوں نے کہاکہ منی لانڈرنگ کے حوالے سے ملک میں پہلے ہی قوانین موجود ہیں ، کوئی بھی غریب شخص اس میں ملوث نہیں بلکہ اس میں بڑے بڑے سرمایہ دار اور کرپٹ افراد ملوث ہیں جن کے خلاف سخت تادیبی کارروائی عمل میں لائی جانی چاہئے۔ انھوں نے کہاکہ ملک میں سالانہ 10ارب روپے کی منی لانڈرنگ لمحہ فکریہ ہے۔ حکومت بڑے مگر مچھوں کو پکڑے تو کرپشن کا بڑا دروازہ بند ہوسکتا ہے مگر ضرورت اس امر کی ہے کہ اس حوالے سے مخلصانہ اقدامات کیے جائیں۔ چور، کرپٹ اور لٹیروں کے رحم و کرم پر ملک کو نہیں چھوڑاجاسکتا۔امیر العظیم نے مزید کہا کہ وفاقی کابینہ کی جانب سے سزائے موت ختم کرنے کا فیصلہ ناقابل فہم ہے۔ اس سے معاشرے میں جرائم کی سزاؤں کے حوالے سے خوف ختم اور لاقانونیت میں اضافہ ہوگا۔ حکمران جماعت بیرونی دباؤ میں آکر اس قسم کے فیصلے کررہی ہے جس کی جتنی بھی مذمت کی جائے کم ہے۔

 
 
 
 
     ^واپس اوپر جائیں



سوشل میڈیا لنکس