Jamaat-e-Islami Pakistan | English |

اہم خبریں

احتساب سب کا ناگزیر ہے ، پسند و ناپسند کی بنیاد پر اقدامات اور حکومتی رویہ کرپٹ مافیا کو مظلوم اور انتقام کا عنوان بنا رہاہے ۔لیاقت بلوچ


لاہور7 اپریل 2019ء: جماعت اسلامی پاکستان کے سیکرٹری جنرل اور سابق پارلیمانی لیڈر لیاقت بلوچ نے لاہور میں تقاریب سے خطاب ، صحافیوں سے گفتگو اور جمعیت طلبہ عربیہ کے سالانہ اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے کہا ہے کہ احتساب سب کا ناگزیر ہے ۔ پسند و ناپسند کی بنیاد پر اقدامات اور حکومتی رویہ کرپٹ مافیا کو مظلوم اور انتقام کا عنوان بنا رہاہے ۔ احتساب کے لیے حکومت نہیں عدلیہ اور قانون نافذ کرنے والے اداروں کو قانون اور انصاف کے مطابق متحرک ہونا چاہیے ۔ حکومت عوام کو ریلیف دے ، عوام کے مسائل حل کرے ، پارلیمنٹ اور اسمبلیوں میں عوامی مسائل کے حل کے لیے قانون سازی کرے ۔ حکومت اپوزیشن والا اسلوب چھوڑ ے اور گڈ گورننس کے ساتھ عوام کو اچھی حکومت دے، ابھی تک عمران خان ناکام حکمران ہیں ۔
لیاقت بلوچ نے کہاکہ مساجد ، مدارس روشنی کا مینار ، دینی مدارس کے طلبہ وحدت امت کے لیے نعمت اور رحمت ہیں ۔ حکومت اور پالیسی ساز پاکستان کو سیکولر ، لبرل ، مادر پدر آزاد ریاست بنانے کا ارادہ ترک کریں ۔ عالمی بدلتے حالات میں پاکستان کے اسلامی نظریاتی کردار کو ہی مضبوط اور مستحکم کیا جائے ۔ افغانستان کے عوام سے جرا ¿ت ، استقامت اور مقصد کی لگن کا درس لیں ۔انہوںنے کہاکہ نیوز ی لینڈ کے المناک واقعہ سے قومی وحدت کی دانش مندی اور کشمیریوں کی آزاد ی اور حق خود ارادیت کے لیے غیر متزل جدوجہد سے حوصلہ پکڑیں ۔
لیاقت بلوچ نے بہاﺅالدین زکریا یونیورسٹی کے سابق وائس چانسلر ، دانش ور ، بین الاقوامی امور کے ماہرڈاکٹر طاہر امین کے انتقال پر دکھ اور صومہ کا ا ظہار کیا اور کہا کہ ملک ایک ذہین ، ماہر تعلیم اور محب وطن دانشور سے محروم ہوگیاہے ۔

 
 
 
 
     ^واپس اوپر جائیں



سوشل میڈیا لنکس