Jamaat-e-Islami Pakistan | English |

اہم خبریں

دہشتگردی کو اسلام سے منسلک کرنے والے اپنے رویے پر غور کریں۔راناعدنان


فیصل آباد16 مارچ 2019ء:جے آئی یوتھ پنجاب کے سینئرنائب صدر راناعدنان خاں اورضلعی صدر چوہدری عمرفاروق گجر نے کہا ہے کہ نیوزیلینڈ میں دہشتگردی کے نتیجے میں پچاس سے زائد مسلمانوں کی شہادت پر اپنے گھر ے دکھ اور افسوس کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ اس واقعہ سے پتہ چلتا ہے کہ یورپ میں مسلمانوں کی عبادت گاہیں محفوظ نہیں ہیں، دہشت گردوں کو جلد از جلد کیفر کردار تک پہنچایا جائے۔ نیوزی لینڈ کی مسجد میں نہتے نمازیوں پر دہشت گردی کے واقعہ پر عالم اسلام غم میں ڈوبا ہوا ہے اس سانحہ کی جتنی مذمت کی جائے وہ کم ہے۔رہنماﺅں کاکہنا ہے کہ ہمیں دہشتگردی کا الزام دیا جاتا رہاہے حالانکہ دنیا کے ترقی یافتہ ممالک میں ہماری مساجد اور عبادت گاہیں محفوظ نہیں، دہشتگردی کو اسلام سے منسلک کرنے والے اپنے رویے پر غور کریں۔ اس واقعہ پر فوری طور پر او آئی سی کا اجلاس طلب کرکے مسلمانوں کی حفاظت اور انہیں دہشت گردی سے بچانے کی حکمت عملی طے کی جائے اور مستقبل میں ایسے سانحات کے سد باب کیلئے عالمی برادری کو مشترکہ حکمت عملی اپنانے پر زور دیا جائے مغربی ممالک خاص طور پر امریکہ اور برطانیہ کی جانب سے ہمارے نبی کے شان میں گستاخی کرنے والے عیسائی دہشتگردی کو اظہار آزادی کے نام پر تحفظ جبکہ کسی بھی جگہ پر غیرمسلم کمیونٹی پر حملے کو مسلمانوں اور اسلام سے جوڑنے، اسلام کو دہشتگرد مذہب قرار دینے والوں کی اس حملے کے بعد آنکھیں کھل جانی چاہیں، کیوں کہ دہشتگردوں کا کوئی مذہب نہیں ہوتا اور دنیا میں دہشتگردی سے مسلمان سب سے زیادہ متاثر ہوئے ہیں چاہے وہ اسرائیل کی فلسطینیوں کیخلاف ہو یا بھارت میں کشمیریوں اور دیگر مسلمانوں کیخلاف ہو یا پھر افغانستان اور عراق میں امریکی دہشتگردی ہو، دنیا کو اب دہشتگردی کو مذہب اور رنگ ونسل سے الگ کرکے دیکھنا ہوگا۔انہوں نے اس المناک حادثے میں شہید ہونے والے افراد کے لواحقین کے ساتھ دلی دکھ اور ہمدردی کا اظہار بھی کیا۔

 
 
 
 
     ^واپس اوپر جائیں



سوشل میڈیا لنکس