Jamaat-e-Islami Pakistan | English |

اسلام ہی عورتوں کے حقوق اور معاشرے میں ان کے جائز مقام کا سب سے بڑا محافظ ہے۔تحفظ نسواں مظاہرہ سے خطاب


لاہور 13  مارچ 2019ء: تفصیلات کے مطابق ٹیچرز فورم کے زیر اہتمام بھیکے وال موڑ پر''تحفظ نسواں کا امین اسلامی پاکستان '' کے عنوان سے مظاہرے کا انعقاد ہوا جس میں جماعت اسلامی حلقہ خواتین لاہور کی سر براہان نے بھرپور شرکت کی اور حمایت کا اعلان کیا۔ظاہرے میں ارباب علم و دانش اساتذات فورم،موثر طبقات کی خواتین،وکلاء و صحافیات نے بھی شرکت کی۔اس موقع پر ٹیچرز فورم لاہور اور جماعت اسلامی حلقہ خواتین کی عہدیداران نے شرکاء سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ اسلام ہی وہ واحد مذہب ہے جس نے سب سے پہلے ہر طرح کے حقوق عورت کو دئیے اور ہر روپ میں عزت بخشی ماں کی حیثیت سے قدموں تلے جنت رکھ دی،بیٹی رحمت،بیوی ایمان کی ساتھی اور بہن محترم قرار دی،صرف اور صرف دین اسلام ہی عورتوں کے حقوق اور معاشرے میں ان کے جائز مقام کا سب سے بڑا محافظ ہے اور یہ تحفظ صرف قرآن و سنت کی روشنی سے ہی ممکن ہے۔انہوں نے کہا کہ ہر خاندان میں ماں سائبان کی حیثیت رکھتی ہے اگر ماں صاحب ایمان پر ہوگی تو یہ نسلوں تک سرائیت کرے گا۔خاندان مستحکم ہوگا اور خاندان مستحکم تو معاشرہ مستحکم ہو گا اور معاشرہ مستحکم ہو گا تو پاکستان خوشحالی کی طرف گامزن ہو گا۔انہوں نے مزید کہاکہ اگر عورت میں بگاڑ پیدا ہو جائے تو اور وہ اسلامی تعلیمات، معاشرت، تمدن اور تہذیب سے دوری ہو جائے تو اس طرح پوری قوم میں بگاڑ پیدا ہو جائے گا، جو ہمارے آج کے مسلم معاشرے میں ہو رہا ہے، جس کی اہم وجہ ہماری ماؤں اور بہنوں کی اسلامی تعلیمات سے دُوری ہے۔ ہماری بہنیں جو آنے والی ہماری نئی نسل کی معمار ہیں، ہماری تہذیب کی جڑ ہیں۔ اگر وہی اسلامی تعلیمات سے دور ہو جائیں تو آنے والی نئی نسل کی وہ کس طرح تربیت کرسکیں گی۔انہوں نے کہا کہ مرد کی تعلیم ایک فرد واحد کی تعلیم ہے، جب کہ عورت کو تعلیم دینا حقیقت میں ایک خاندان کو تعلیم دینا ہے۔ جب عورت یعنی ماں تعلیم کے زیور سے آراستہ ہوگی تو پورا خاندان تعلیم پائے گا، پھر پورا معاشرہ تعلیم یافتہ ہوگا اور جب پورا معاشرہ تعلیم یافتہ ہوگا تو پوری قوم تعلیم یافتہ ہوگی۔اس موقع پر دیگر شرکأ خواتین نے اپنی رائے کا اظہار خیال کرتے ہوئے کہا کہ یہ ہماری خوش قسمتی ہے کہ مرد جو اللہ نے قوام بنایا،معاش کی ذمہ داری اس پر ڈال کر عورت کو بے فکر کیا اور اس کی نسوانیت کو گھر کی چار دیواری میں محفوظ رکھا اگرچہ ہر خاندان میں ماں سائبان کی حیثیت رکھتی ہے مگر مرد باپ بھائی شوہر اور بیٹے کی حیثیت سے نگہبان ہے اور مشرق کی عورت اس فخر کرتی ہے تاکہ خاندان مستحکم ہو اور خاندان مستحکم تو پاکستان خوشحالی کی طرف گامزن رہے گا۔ مظاہرے میں شرکت کرنے والی اساتذہ خواتین میں ثمینہ سعید، محترمہ صالحہ،ذرافشاں فرحین،شاہینہ طارق،خالدہ 
شہزاد،عائشہ ملک،فضیلہ خالد،عائیشہ صدیقہ اور دیگر نے شرکت کی

 
 
 
 
     ^واپس اوپر جائیں



سوشل میڈیا لنکس