Jamaat-e-Islami Pakistan | English |

اہم خبریں

ملکی ترقی کیلئے مخلص قیات ، عوام دوست پالیسیاں اور شب ور وز کی محنت ضروری ہے۔امیرالعظیم


لاہور28 جنوری 2019ء: امیر جماعت اسلامی صوبہ وسطی پنجاب امیر العظیم نے کہا ہے کہ نوجوان ہمارا قیمتی اثاثہ ہیں،اچھی تعلیم وتربیت کرکے ان کو مفید شہری بنایا جاسکتا ہے۔شعبہ تعلیم واحد شعبہ ہے جس کے لیے حکومت جتنا بھی فنڈ مختص کرے وہ کم ہے۔ شرح خواندگی کو بڑھانے کے لیے ہنگامی اقدامات کرنے ہوں گے۔ بد قسمتی سے ہر دور اقتدار میں اس جانب توجہ نہیں دی گئی۔ ان خیالات کا اظہار انھوں نے گزشتہ روز سائبان انسٹی ٹیوٹ لاہور میں تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ اس موقع پر شفیق ملک ، رانا انعام الحق ، شہزادسلیم، پروفیسر لقمان، پروفیسر شہاب و دیگر سٹاف کے ساتھ ساتھ طالب علموں کی بڑی تعداد بھی موجود تھی۔انہوں نے کہاکہ مستقل مزاجی سے بڑی سے بڑی رکاوٹ کو بھی دور کیا جاسکتا ہے۔ دنیا میں وہی قومیں کامیاب ہوتی ہیں ، جنھوں نے دل جمعی اور ثابت قدمی سے محنت کی ہوتی ہے۔نوجوان نسل ہمارے ملک کا مستقبل ہیں۔ لہٰذا سخت محنت اور نہماک کیساتھ کام کریں اور وقتی مشکلات سے گھبرانے کی ضرورت نہیں ہے۔ اپنے اساتذہ کا احترام کریں ،وہ کسی بھی قوم کے معمار ہوتے ہیں۔ انھوں نے کہا کہ ملک و قوم اس وقت سنگین بحرانوں کی زد میں ہے۔ حکمرانوں نے ہر دور میں بے حسی کی مثالیں قائم کیں ہیں۔ ایک غیر سرکاری ادارے کی رپورٹ کے مطابق اڑھائی کروڑ بچے اسکول جانے کی بجائے محنت مزدوری کرنے پر مجبور ہیں۔ چائلڈ لیبر قوانین کے باوجود ان پر عمل در آمد نہیں ہورہا۔ انھوں نے کہاکہ بلاشبہ محنت میں عظمت ہے ۔ محنت کرکے ہی انسان ایک اچھی تبدیلی لاسکتا ہے۔ جو لوگ محنت نہیں کرتے وہ بے نام و نشان دنیا سے چلے جاتے ہیں۔دنیا میں جس قوم نے بھی ترقی کی ہے اس کے پیچھے مخلص قیات ، عوام دوست پالیسیاں اور شب ور وز کی محنت ہی ملتی ہے۔ امیر العظیم نے مزید کہا کہ حکمرانوں کی جانب سے ملک میں شعبہ تعلیم کے ساتھ ہمیشہ سوتیلی ماں جیسا سلوک روا رکھا گیا ہے۔ سرکاری سکولوں کی حالت انتہائی ابتر ہے۔ کہیں اسکولوں کی چار دیواری نہیں تو کہیں واش رومز اور کلاس رومز کی خستہ حالی حکمرانوں کی بے حسی کا منہ بولتا ثبوت کے طور پر نظر آتی ہے۔ ماضی کے حکمرانوں نے دانش سکولزکے نام پر بھی محض خانہ پری کی۔ 

 
 
 
 
     ^واپس اوپر جائیں

سوشل میڈیا لنکس