Jamaat-e-Islami Pakistan | English |

اہم خبریں

تعلیمی اداروں میں ختمِ نبوت پر نقب زنی لمحہ فکریہ ہے۔ دردانہ صدیقی


کراچی ؍13جنوری2019ء: جماعت اسلامی پاکستان حلقہ خواتین کی جنرل سیکرٹری دردانہ صدیقی نے کراچی کے ایک سرکاری کالج برائے طالبات میں قادیانی ٹیچر کی جانب سے دورانِ کلاس عقیدہ ختم نبوت پر ہرزہ سرائی کی شدید مذمت کی ہے۔ اپنے ایک بیان میں انہوں نے کہا کہ قادیانی مذہب کو ْکھلی چھوٹ دینے اور بے لگام چھوڑنے کا نتیجہ ہے کہ یہ ہمارے مستقبل کے معماروں کے نوخیز اذہان کو اپنے باطل عقائد و نظریات سے آلودہ کرنے لگے ہیں۔ کالج کی بچیوں کا ختم نبوت پر کوئی حرف برداشت نہ کرنا خوش آئند اور حوصلہ افزا ہے۔ انہوں نے کہا کہ اسلامی مملکت میں اقلیتوں کے حقوق اپنی جگہ، مگر کھلے عام غیر اسلامی عقائد کی تبلیغ اور پرچار تشویشناک ہے۔ حکومتی سطح سے ایسے معاملات پر سخت ایکشن لینے کی ضرورت ہے۔ دردانہ صدیقی نے مزید کہا کہ تبدیلی کا مطلب یہ ہرگز نہیں کہ اسلامی عقائد و نظریات کے مقابل نئی نسل کے ذہنوں کو پراگندہ کیا جائے۔ افسوسناک صورتحال یہ یے کہ نئی حکومت کے آنے کے بعد سے تواتر کے ساتھ ایسی صورتحال سامنے آرہی ہے جس نے عوام کو تذبذب میں مبتلا کردیا ہے۔ ختم نبوت کے معاملے میں حکمرانوں کو واضح اور دو ٹوک موقف اپنانے کی ضرورت ہے۔ انہوں نے مطالبہ کیا کہ مذکورہ قادیانی ٹیچر کو سرکاری نوکری سے فی الفور برطرف کیا جائے۔

 
 
 
 
     ^واپس اوپر جائیں

سوشل میڈیا لنکس